منگل , 20 نومبر 2018

جنگ کے باعث القاعدہ یمن میں مضبوط ہوئی یا کمزور؟

(تسنیم خیالی)
یمن پر سعودی اتحاد کی جارحیت کو تین سال سے بھی زائد عرصہ گزر جانے کے بعد بہت سے افراد یہ سوچ رہے ہیں کہ جارحیت سے کئی سال قبل یمن میں دہشت گرد تنظیم القاعدہ کی بھی ملک کے کچھ حصوں پر گرفت مضبوط تھی تو کیا جارحیت کے بعد یمن میںسرگرم القاعدہ کی شاخ کمزور ہوئی یا مزید مضبوط ؟

جارحیت کا تین سال سے بھی زائد عرصہ گزر جانے کے بعد القاعدہ یمن میں کمزور نہیں بلکہ اور بھی طاقتور ہوچکی ہے ، القاعدہ جارحیت کے دوران ان علاقوں پر پھر سے قابض ہوچکی ہے جنہیں وہ پہلے کھو چکی تھی، القاعدہ بنیادی طور پر یمن کے جنوبی حصوں میں سرگرم ہے اور قابل غور بات یہ ہے کہ انھی جنوبی حصوں میں اماراتی اور سعودی فورسز بھی موجود ہیں جس سےصاف ظاہر ہوتا ہےامارات اور سعودی عرب یمنی القاعدہ کے خلاف نہیں، اس بات کو تو سبھی جانتے ہیں کہ القاعدہ امریکہ اور سعودی عرب کی ایجاد کردہ دہشت گرد تنظیم ہے اور امارات سمیت متعدد دیگر ممالک بھی اس سازش میں شامل تھے، اور یہ ممالک کسی بھی دور میں القاعدہ مخالف نہیں تھے اور ناہی مستقبل میں ہونگے۔

یمنی میدان جنگ انتہائی پیچیدہ ہے،جس میں سعودیہ اور اس کے اتحادی انصار اللہ کے خلاف نبردآزما ہیں،علاوہ ازیںیہی سعودی اتحاد جنوبی علاقوں میں القاعدہ کا بھی ساتھ دیتا آرہا ہے جس کی وجہ سے القاعدہ مزید مضبوط ہوئی، اس وقت القاعدہ کے کنٹرول میں یمن کے متعدد علاقے اور بعض اہم شہر واقع ہیں جن میں سب سے اہم ’’المکلا‘‘ نامی سمندری شہر بھی شامل ہے، اس شہر میں یمن کی ایک اہم بندرگاہ بھی موجود ہے البتہ یہ شہر سعودی اماراتی سازش کے تحت القاعدہ کے قبضے میں ہے، دہشت گردی کے خلاف جنگ لڑنے کا دعویدار امریکہ بھی یمن میں القاعدہ کے خلاف اقدامات نہیں کرتا۔

اس ضمن میں جو خبریں امریکی ذرائع ابلاغ پر شائع ہوتی ہیں کہ امریکہ نےیمنی القاعدہ کے خلاف فضائی کارروائی کی ہے، یہ کیا ہے ، وہ کیا ہے، سب جھوٹ اور فریب ہے، امریکہ نے القاعدہ کی خواہ وہ شام میں ہو، عراق میں ہو، صومالیہ میں ہویا پھر یمن میں ہمیشہ سے حمایت کی اور وسائل فراہم کئے اور آج بھی یمنی القاعدہ کے ساتھ امریکہ ہر قسم کا تعاون کرتا آرہا ہے، ایک اور قابل غور بات یہ ہے کہ سعودی اتحاد کی فضائی کارروائیاں تین سالوں سے ان علاقوں میں ہورہی ہے ،جہاں القاعدہ کے افراد موجود نہیں، ان کارروائیوں میں نہتے شہری اور کمسن بچے شہید ہوئے ہیں جبکہ جارحیت کی آغاز سے اب تک یہ کبھی نہیں ہوا کہ سعودی اتحاد کی کارروائیوں میں القاعد ہ کا کوئی جنگجو ہلا ک ہوا ہو ، اب آپ خود اندازہ لگائیں القاعدہ یمن میں کمزور ہو گی یا طاقتور۔

یہ بھی دیکھیں

مسلمانوں کے قبلہ اول کی 500 کیمروں سے جاسوسی!

قابض صہیونی انتظامیہ نے مسجد اقصیٰ کی جاسوسی اور وہاں پرآنے والے نمازیوں پر نظر ...