پیر , 16 جولائی 2018

برطانیہ میں سیاسی بحران حکومت سقوط کے دہانے پر:بر طانوی میڈیا

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک)برطانوی میڈیا نے اپنی ایک رپورٹ میں ملک کے وزیرخارجہ بورس جانسن کی طرف سے بریگزیٹ کے معاملے پر وزیراعظم تھریسامے سے اختلافات کے باعث عہدے سے استعفیٰ پر تبصرہ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ملک میں سیاسی بحران پیدا ہونے کی وجہ سے حکومت سقوط کے دہانے پر کھڑی ہے۔برطانوی میڈیا میں ملک کے وزیرخارجہ بورس جانسن کی طرف سے بریگزیٹ کے معاملے پر وزیراعظم تھریسامے سے اختلافات کے باعث عہدے سے استعفیٰ پر تبصرہ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ملک میں سیاسی بحران پیدا ہونے کی وجہ سے حکومت سقوط کے دہانے پر کھڑی ہے۔

رپورٹ کے مطابق برطانیہ میں سیاسی بحران جاری ہے اورگزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران برطانوی حکومت کے دوسرے اہم وزیرکے استعفے کے بعد وزیراعظم تھریسامے کی حکومت گرنے کے خطرات بڑھ گئے ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ وزیراعظم تھریسامنے کی حکومت گرنے کے خطرات دن بدن بڑھتے جارہے ہیں جس کی بنیادی وجہ بریگزیٹ کے حوالے سے ان کی پالیسی ہے کیونکہ بیشتر ارکان پارلیمنٹ اس حوالے سے ان کی پالیسی سےخوش نہیں ہیں اوربرطانوی وزیرخارجہ بورس جانسن نے اسی بناء پر اپنے عہدے سے استعفیٰ دیدیااور اس سے قبل گزشتہ روز وزیر برائے بریگزٹ ڈیوڈ ڈیوس بھی عہدے سے مستعفیٰ ہوگئے تھے۔

رپورٹ کے مطابق اپنے استعفے میں ڈیوڈ ڈیوس نے وزیراعظم تھریسامے کی پالیسیوں پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ یورپی یونین کے معاملے پر برطانوی وزیراعظم کو حریفوں کے علاوہ اپنے حلیفوں کی جانب سے بھی تنقید کا سامنا ہے۔

در ایں اثناء سیاسی بحران سے نکلنے کیلئے برطانیہ کی وزیر اعظم تھریسا مے نے جیرمی ہنٹ کو ملک کے نئے وزیر خارجہ کے طور پر مقرر کیا ہے قبل ازیں جیرمی ہنٹ وزیر صحت تھے۔

واضح رہے کہ 1997 سے مسلسل رکن پارلیمنٹ منتخب ہونے والے ڈیوڈ ڈیوس کو 2016 میں بریگزٹ کا سیکرٹری مقرر کیا گیا تھا جس کا عہدہ وزیر کے برابر ہوتا ہے برطانیہ کو یورپی یونین سے انخلاء کے عمل کو 29 مارچ 2019 تک مکمل کرنا ہے ۔

یہ بھی دیکھیں

جنوبی افریقا میں تانبے کی کان میں آتشزدگی،5کان کن ہلاک

جوہانسبرگ(مانیٹرنگ ڈیسک)جنوبی افریقا کے شہر جوہانسبرگ کے شمال میں واقع تانبے کی کان میں آتشزدگی ...