بدھ , 26 ستمبر 2018

طلال چوہدری کے خلاف توہین عدالت کیس کا فیصلہ محفوظ کر لیا گیا

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے طلال چوہدری کے خلاف توہین عدالت کیس کا فیصلہ محفوظ کر لیا۔فیصلے کے روز طلال چوہدری کو حاضری یقینی بنانے کا حکم دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق اب تک پاکستان مسلم لیگ ن کے کئی رہنماوں پر توہین عدالت کا کیس چل چکا ہے۔پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری کے خلاف بھی توہین عدالت کا کیس چلتا رہا۔تاہم سپریم کورٹ نے لگی رہنما کے خلاف توہین عدالت کا فیصلہ محفوظ کر لیا ہے۔عدالت کا کہنا ہے کہ طلال چوہدری کے خلاف توہین عدالت کا فیصلہ مناسب وقت پر کیا جائے گا۔عدالت نے فیصلے کے روز طلال چوہدری کو حاضری یقینی بنانے کا حکم دیا ہے۔عدالت کا کہنا ہے کہ جس روز طلال چوہدری کے خلاف توہین عدالت کا فیصلہ سنایا جائے۔اس روز طلال چوہدری عدالت میں موجود ہوں۔جسٹس گلزار احمد کا کہنا ہے کہ ہم نے ابھی طلال چوہدری کے خلاف توہین عدالت کیس کا فیصلہ سنانے کی تاریخ نہیں دی۔جب کہ طلال چوہدری کے وکیل کامران مرتضی نے عدالت سے استدعا کی ہے کہ کیس کا فیصلہ الیکشن کے بعد سنایا جائے۔

واضح رہے کہ یکم فروری کو عدلیہ مخالف تقریر پر آرٹیکل 184 (3) کے تحت چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے مسلم لیگ (ن) کے رہنما طلال چوہدری کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کیا تھا۔ طلال چوہدری نے جڑانوالہ کے جلسے میں مبینہ طور پر ججز کے خلاف توہین آمیز زبان استعمال کی تھی، وہ اس سے قبل بھی پاناما کیس کے سلسلے میں شریف خاندان کے مالی اثاثوں کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی اور عدلیہ پر تنقید کرچکے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

پشاور، تعلیمی اداروں میں سیاسی سرگرمیوں پر پابندی عائد

پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک) مشیر تعلیم خیبرپختونخوا ضیاءاللہ بنگش نے ضلع بنوں کے سرکاری سکول میں ...