منگل , 25 ستمبر 2018

لمس یونیورسٹی کے طلباء نے معذور افراد کے لیے مخصوص وہیل چیئر تیار کرلی

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) لمس یونیورسٹی کے طلباء نے معذور افراد کیلئے موبائل ایپ سے چلنے والی خصوصی وہیل چیئر تیار کی ہے جس کو موبائل کلک کی آواز سے باآسانی چلایا جا سکتا ہے۔ویسے تو دنیا بھر میں چلنے سے معذور افراد کی مدد کے لیے الیکٹرک وہیل چیئرز بھی دستیاب ہیں، جن کی مدد سے ان افراد کو نقل و حرکت کرنے میں مدد ملتی ہے، تاہم اب معذور افراد کی آسانی کے لیے لمس یونیورسٹی کے طلباء نے ایک ایسی وہیل چیر متعارف کرائی ہے کہ جس کو موبائل ایپلیکیشن کے ذریعے آپریٹ کیا جا سکے گا۔

مذکورہ وہیل چیئر کو صرف ایک موبائل کلک کے ذریعے چلایا جاسکتا ہے، لمس یونیورسٹی لاہور کے طلبہ کی جانب سے تیار کی جانے والی اس اینڈرائیڈ وہیل چیئر کا نام گو بی ون پوائینٹ زیرو رکھا گیا ہے۔مذکورہ وہیل چیئر بنانے والے طالب علم کا اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اسے سو فٹ کے فاصلے سے کنٹرول کیا جاسکتا ہے اور استعمال کرنے والا اسے اپنے پاس بلا سکتا ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ وہ ایک سائگنی نامی وہیل چیئر بھی بنا رہے ہیں جو رینج اور سہولت میں گو بی 1.0سے بھی بہتر ہوگی،

اس حوالے سے ایک معذور ڈاکٹر کا کہنا تھا کہ میرے ہاتھ کام نہیں کرتے ، اس ایپ میں ایک وائس کمانڈ دی گئی ہے جس کے ذریعے مجھے بہت فائدہ ہوگا اور میں کسی کی مدد لیے بغیر خود اپنے آفس میں گھوم سکتا ہوں کلاس روم بھی جاسکتا ہوں۔

یہ بھی دیکھیں

جرمنی میں ہائیڈروجن سے چلنے والی دنیا کی پہلی ٹرین کا افتتاح

برلن(مانیٹرنگ ڈیسک) جرمنی میں ہائیڈروجن سے چلنے والی دنیا کی پہلی ٹرین نے اپنے سفر ...