جمعرات , 18 اکتوبر 2018

آئرش پارلیمنٹ نے اسرائیلی مصنوعات کے بائیکاٹ کا بل منظور کرلیا

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک)یورپی ملک آئرلینڈ کی سینٹ میں فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے میں اسرائیل کے غیرقانونی کارخانوں میں تیار ہونے والی مصنوعات کے بائیکاٹ کا بل منظور کرلیا۔ اس بل کی منظوری کے بعد اسرائیلی کارخانوں کی مصنوعات کی آئرلینڈ میں درآمدات پر پابندی کی راہ ہموار ہو گئی ہے۔

خیال رہے کہ آئرلینڈ کی پارلیمنٹ نے اسرائیلی مصنوعات پر پابندی کے بل پر رواں سال جنوری میں رائے شماری کا فیصلہ کیا تھا تاہم آئرش حکومت اورلیمنٹ کے درمیان ایک معاہدہ طے پایا جس کے تحت حکومت نےبل کی منظوری سے قبل صہیونی ریاست پر دباؤ ڈالنے کا یقین دلایا تھا۔ تاہم آئرش حکومت غرب اردن میں یہودی کالونیوں کے کارخانوں میں تیار ہونے والی مصنوعات کی روک تھام کے حوالے سے کوئی موثر اقدام نہیں کرسکی۔

اسرائیلی مصنوعات کی درآمدات کے بائیکاٹ کی کوششوں پر اسرائیل نے اپنے ہاں متعین آئرلینڈ کی خاتون وزیر کو وزارت خارجہ میں طلب کرکے شدید احتجاج کیا تھا۔

اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو نے الزام عاید کیا ہے کہ آئرلینڈ کی پارلیمنٹ کے آزاد ارکان نے صہیونی ریاست کے بائیکاٹ کی عالمی تحریک ’بی ڈی ایس‘ سے متاثر ہو کرصہیونی مصنوعات کے بائیکاٹ کا بل پیش کیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

کینیڈا: بھنگ کی پیدوار اور خرید و فرخت پر پابندی ختم

اوٹاوا (مانیٹرنگ ڈیسک) کینیڈا نے تقریباً ایک صدی بعد ‘بھنگ‘ کی پیداوار اور خرید و ...