منگل , 23 اکتوبر 2018

جوہری معاہدے کے بعد ثابت ہو چکا کہ امریکہ پر اعتماد نہیں کیا جا سکتا: ایران

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک)اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے جوہری معاہدے کے تیسرے سال کی مناسبت سے کہا کہ جوہری معاہدے کے بعد ثابت ہو گیا کہ امریکہ کسی بھی معاہدے کا پابند نہیں ہے اور اس پر اعتماد نہیں کیا جا سکتا۔

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا کہ ایران کو معلوم تھا کہ امریکہ اپنے وعدوں پر کاربند نہیں رہے گا اور اب امریکہ کے اتحادی بھی اس نتیجے پر پہنچے ہیں کہ امریکہ کسی بھی معاہدے کا پابند نہیں ہے اور اس پر اعتماد نہیں کیا جا سکتا۔ایران کے وزیر خارجہ نے کہا کہ جوہری معاہدہ امریکی اقدامات اور خلاف ورزیوں کے باوجود سفارتی سطح پر کامیابی کے عنوان سے باقی ہے۔

واضح رہے کہ 14 جولائی 2015 کو ایران اور 1+5 کے مابین جوہری معاہدہ طے پایا لیکن امریکا نے 8 مئی 2018 کو یکطرفہ طور پر اس معاہدے سے علیحدگی کا اعلان کرتے ہوئے عالمی قوانین کی دھجیاں اڑائیں۔

یہ بھی دیکھیں

ادلب: دہشت گردوں کے کیمیائی ہتھیاروں کے کارخانے میں دھماکہ، گیارہ ہلاک

ادلب (مانیٹرنگ ڈیسک) شام کے صوبہ ادلب میں دہشت گردوں کے کیمیائی ہتھیاروں کے کارخانے ...