منگل , 23 اکتوبر 2018

ملائیشیا میں مہاتیر محمد نے ’قرض اتارو ملک سنوارو‘ اسکیم شروع کردی

کوالالمپور(مانیٹرنگ ڈیسک)ملائیشیا کی حکومت نے اندرونی اور بیرونی قرضے اتارنے کے لیے مدد کی خاطر عوام کے دروازوں پر دستک دی ہے۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق ملائیشیا میں قرض اتارو اسکیم کے تحت اب تک تین کروڑ 70 لاکھ ڈالر کی رقم جمع کی جا چکی ہے۔ ملائیشیا کی وزارت خزانہ کا کہنا ہے کہ اس نے قرض اتارو اسکیم کے تحت اس نے اب تک سرکاری خزانےمیں ایک ارب 50 کروڑ ’رنگیٹ‘ جمع کیے ہیں۔ امریکی کرنسی میں یہ رقم 3 کروڑ 70 لاکھ ڈالر بنتی ہے۔

ملائیشیا میں قرض اتارو مہم کے تحت عوام سے فنڈ ریزنگ مہم 30مئی کو شروع کی گئی تھی۔ حکومت کا کہنا ہے کہ دو ماہ سے کم عرصے میں عوام نےدل کھول کر حکومت کو عطیات دیے ہیں اور ڈیڑھ ارب رنگیٹ جمع کیے گئے ہیں۔

خیال رہے کہ ملائیشیا کے سرکاری قرضوں کا حکم 2 ارب 47 کروڑ ڈالر ہے جو ملک کی جی ڈی پی کا 80 فی صد ہے۔ملائیشیا کی موجودہ حکومت نے ملک پرقرضوں کے بھاری بوجھ کی ذمہ داری سابق وزیراعظم نجیب عبدالرزاق پرعاید کی ہے اور کہا ہے کہ سابق حکومت کی غلط معاشی پالیسیوں اور وسیع پیمانے پر بدعنوانی نے ملک قرضوں کے بوجھ تلے دب گیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

سعودی عرب جمال خاشقجی کی لاش کے بارے میں واضح کرے: ایمنسٹی انٹرنیشنل

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک) ایمنسٹی انٹرنیشنل نے صحافی قتل کیس میں خود کو بچانے کی سعودی ...