منگل , 19 فروری 2019

مصر چرچ پر حملوں میں ملوث 6 خودکش حملہ آور گرفتار

قاہرہ (مانیٹرنگ ڈیسک)مصر کی سکیورٹی فورسز نے ایک کامیاب آپریشن کے دوران چرچ پر حملوں میں ملوث دو خواتین سمیت 6 خود کش حملہ آور دہشت گردوں کو حراست میں لے لیا ہے۔اطلاعات کے مطابق قاہرہ پولیس نے ہفتے کے روز چرچ پر کیے گئے ناکام حملے میں ملوث ملزمان کو حراست میں لینے کا دعویٰ کیا ہے، گرفتاریاں انٹیلی جنس اداروں کے تعاون سے چھاپہ مار کارروائی کے دوران عمل میں آئیں۔

چھاپے کے دوران وہابی دہشت گردوں سے بڑی تعداد میں اسلحہ اور آتش گیر مواد بھی برآمد ہوا ہے جب کہ خود کش حملوں میں استعمال ہونے والی 6 بارود سے بھری جیکٹس بھی برآمد ہوئی ہیں۔ گرفتاریاں ہفتے کے روز ایک چرچ پر ناکام حملے کے بعد عمل میں لائی گئیں۔

چرچ حملے کا مرکزی ملزم 29 سالہ عمر دہشت گرد سیل کا انچارج ہے اور تربیت یافتہ خود کش بمباروں کی کھیپ تیار کرنے کی ذمہ داری بھی اسی شخص کی ہے، عمر کے دہشت گرد سیل ہی کے ایک خود کش بمبار نے ہفتے کے روز ورجن میری کے چرچ پر ناکام حملہ کیا تھا۔

واضح رہے کہ قالیوبیہ موسٹورڈ چرچ میں ہفتے کے روز منعقدہ ایک دعائیہ تقریب کو دہشت گرد نشانہ بنانے چاہتے تھے تاہم سیکیورٹی فورسز کے روکنے پر ایک خود کش حملہ آور نے خود کو دھماکے سے اُڑا لیا تھا۔ سکیورٹی فورسز کی بروقت کارروائی سے چرچ میں موجود لوگ محفوظ رہے تھے۔

یہ بھی دیکھیں

غزہ کی پٹی میں آباد 13 لاکھ فلسطینی غذائی قلت کا شکار ہیں:اونروا

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)فلسطینی پناہ گزینوں کے عالمی ادارے ‘اونرو’ نے اپنی رپورٹ میں ...