جمعرات , 23 نومبر 2017

امریکی کمپنی ایک انگلی سے چلنے والا کی بورڈ ماؤس تیارکرنے میں مصروف

key-board-mouse_-_2_1464160695

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی کمپنی ایسی ڈیجیٹل ڈیوائس تیار کررہی ہے جو دکھنے میں ایک ماس کے برابر ہے لیکن اسے صرف ایک انگلی کے ذریعے نہ صرف ماس کے طور پر استعمال کیا جا سکتا ہے بلکہ مکمل ٹائپنگ بھی کی جا سکتی ہے ۔تیار ہو جائیں مستقبل کے کی بورڈ اور ماس کیلئے جو صرف ایک چھوٹی سی ڈیوائس پر مشتمل ہے اور یہ ڈیوائس جسے (Nydeum Sense) کا نام دیا گیا ہے بغیر کسی تار کے بھی کام کریگی۔ہم تیزی سے ورچوئل ریئلٹی کی دنیا کی جانب بڑھ رہے ہیں اس دنیا میں عام ماس اور کی بورڈ کی کوئی گنجائش موجود نہیں ہے ۔ اس لیے ڈیجیٹل ایلفابٹ نامی کمپنی عوامی مدد سے ایک ایسی ڈیوائس تیار کر رہی ہے جو دکھنے میں ماس جتنی ہے لیکن اس میں کی بورڈ اور ماس دونوں کی خصوصیات موجود ہیں۔بیٹری سے چلنے والی یہ ڈیوائس سمارٹ فون، ٹیبلٹ، سمارٹ واچ اور کمپیوٹرز کے ساتھ باآسانی استعمال کی جا سکتی ہے ۔ اسے استعمال کرنے کیلئے کسی سطح پر رکھنے کی بھی ضرورت نہیں پڑتی۔ اس میں ٹائپنگ کا انداز بھی بدل دیا گیا ہے کیونکہ اس پر بٹنز موجود نہیں بلکہ ہر لفظ لکھنے کیلئے مختلف ترتیب رکھی گئی ہے کہ اس پر کس طرف انگلی پھیریں تو کون سا حرف ٹائپ ہو۔مکمل طور پر وائرلیس ہونے کی وجہ سے اس کے ذریعے باآسانی سکرین سے دور بیٹھ کر بھی ٹائپ کیا جا سکتا ہے ۔ اسے بنانے والی کمپنی کا کہنا ہے کہ عام ٹائپنگ کی طرح اس کی ٹائپنگ سیکھنے کے بعد باآسانی تیز رفتاری سے ٹائپ کیا جا سکتا ہے ۔ عام صارفین سے لیکر کمپیوٹر گیمنگ کے شوقین افراد تک سبھی کیلئے یہ ڈیوائس یکساں مفید ثابت ہو گی۔

یہ بھی دیکھیں

واٹس ایپ کا ”پش ٹو ٹاک وائس میسج “ فیچر تبدیل کرنے کا فیصلہ

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)  واٹس ایپ نے 2013 میں پش ٹو ٹاک وائس میسج کا فیچر متعارف ...