جمعہ , 19 اکتوبر 2018

عہدہ چھوڑنے کی باتیں بے بنیاد ہیں، پینٹاگون نہیں چھوڑوں گا، جیمز میٹس

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی وزیردفاع جیمز میٹس نے کہا ہے کہ وائٹ ہاؤس چھوڑنے کا کوئی ارادہ نہیں، ڈونلڈ ٹرمپ انتظامیہ کا حصہ ہوں، حکومت سے الگ ہونے کا سوچا بھی نہیں ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق امریکی وزیردفاع جیمز میٹس نے اخبارات میں شائع ہونے ان خبروں کو بے بنیاد قرار دیا کہ وہ امریکی انتظامیہ سے الگ ہورہے ہیں۔امریکی وزیر دفاع کا کہنا تھا کہ وہ اس طرح کی کتنی افواہیں سن چکے ہیں اور آئندہ بھی سنتیں رہیں گے مگر حقیقت یہ ہے کہ میں حکومت سے الگ نہیں ہورہا۔

ایک سوال کے جواب میں جیمز میٹس نے مسکراتے ہوئے کہا کہ مجھے اس جگہ سے محبت ہے، میں یہاں سے ریٹائرڈ ہونے کا سوچ رہا ہوں، امید ہے مجھے یہاں تھوڑی جگہ مل جائے گی۔

واضح رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو وزیر دفاع جیمز میٹس کی جانب سے پاگل کہے جانے پر امریکا کی وفاقی کابینہ کی جانب سے انہیں برطرف کیے جانے کا امکان ظاہر کیا جارہا تھا۔

امریکی خبررساں ادارے کا کہنا تھا کہ گزشتہ کچھ ماہ سے امریکی صدر ٹرمپ اور وزیردفاع میٹس کے درمیان نیٹو سے متعلق پالیسی پر شدید اختلافات چل رہے تھے۔مقامی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ جیمز میٹس نے امریکی انتظامیہ میں جو مدت گزاری ہے اس دوران انہوں نے خود کو معاملات سے دور رکھنے کی کوشش کی ہے۔

خیال رہے کہ اسی ماہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے اہم اقتصادی مشیر گیری کوہن اور مشیر برائے قومی سلامتی جنرل مک ماسٹر اپنے عہدے سے استعفیٰ دے چکے ہیں، دونوں امریکی رہنماؤں کو صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی اقتصادی پالیسیوں سے اختلاف تھا۔

یہ بھی دیکھیں

سعودی سرمایہ کاری کانفرنس: امریکا کا شرکت نہ کرنے کا فیصلہ

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکا نے سعودی صحافی جمال خاشقجی کی گمشدگی کے معاملے پر سعودی ...