منگل , 18 دسمبر 2018

ایک اہم سعودی شہزادہ بن سلمان کے خلاف شہزادہ احمد کے ساتھ ہے

(تسنیم خیالی)

مشہور ٹویٹر صارف ’’مجتہد‘‘ نے انکشاف کیا ہے کہ سعودی فرمانروا شاہ سلمان اور ان کے ولی عہد کے خلاف بغاوت کرنے والے شہزادہ احمد بن عبدالعزیز کے ساتھ ایک اہم سعودی شہزادہ اس وقت لندن میں موجود ہے جس کے امریکہ کے ان اداروں کے ساتھ تعلقات مضبوط ہیں جو موجودہ سعودی نظام اور اس نظام کے حامی امریکی صدر کے خلاف ہیں ۔

مجتہد کے بقول وہ اہم شہزادہ کوئی اور نہیں شہزادہ احمد کا بھتیجا اور داماد شہزادہ سلمان بن سلطان بن عبدالعزیز آل سعود ہیں جو کسی دور میں نائب وزیردفاع اور سعودی نیشنل سکیورٹی کونسل چیف کے سابق نائب صدر کے ساتھ ساتھ سعودی دفتر خارجہ میں اہم عہدے پر فائز رہ چکے ہیں ، علاوہ ازیں وہ امریکہ میں سعودی سفارت خانے کے عسکری شعبے میں بھی فرائض سرانجام دے چکے ہیں جس کی بدولت انہوں نے اندرون اور بیرون ملک اہم اور مضبوط تعلقات قائم کرنے میں کامیابی حاصل کی ۔

مجتہد مزید کہتے ہیں کہ شہزادہ سلمان بن سلطان آل سعود خاندا ن کے دیگر افراد کے نسبت زیادہ قدامت پسند اور سمجھدار ہیں ، ان کی سمجھداری کا ایک ثبوت یہ ہے کہ انہوں نے بن سلمان کی ابتداء میں مخالفت نہیں کی حالانکہ وہ اس بات سے واقف تھے کہ بن سلمان کی نیت ٹھیک نہیں اور وہ تباہی مچانے جارہے ہیں ، اس کے برعکس اس نے پہلے اپنے آپ اور اپنے اہل وعیال کو بچانے کے لئے احتیاطی تدابیر کیں ، موصوف نے بن سلمان کی ایک طرف بطور ولی عہد بیعت کی تو دوسری جانب شہزادہ احمد کے ساتھ بھی مضبوط تعلقات اور رابطے رکھے۔

مجتہد مزید کہتے ہیں کہ سلمان بن سلطان کی سمجھداری کی ایک اور نشانی یہ ہے کہ وہ سعودی عرب واپس نہیں لوٹ رہے ہیں اور ساتھ ہی انہوں نے ان امریکی اداروں کے ساتھ بھی تعلقات پھر سے قائم کرلئے ہیں جو موجودہ سعودی نظام اور اس نظام کےحامی امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ کے مخالف ہیں ، علاوہ ازیں موصوف نےاپنے ننہیال ’’العجمان‘‘ خاندان کے ذریعے دیگر قبائل کے ساتھ رابطے استوار کرکے بن سلمان کے بہت سے ’’برے ‘‘ منصوبوں کے حوالے سے اہم معلومات حاصل کرلی ہیں ۔

مجتہد کے بقول آل سعود خاندان میں یہ بات گردش کررہی ہے کہ شہزادہ احمد بن عبدالعزیز کے ساتھ متعدد شہزادے رابطے میں ہیں جو اس وقت بیرون ملک ہیں ، اور دو شہزادے ایسے ہیں جن کی وجہ سے خاندان کے افراد میں امید کی کرن جاگ اٹھی ہےاور وہ شہزادےلند ن میں احمد کے ساتھ موجودسلمان بن سلطان اور فرانس میں موجود شہزادہ عبدالعزیز بن عبداللہ ہیں جو کہ اس وقت شہزادہ احمد کا ساتھ دینے والے سب سے باوزن شہزادوں میں شمار ہوتے ہیں خاص طور پر شہزادہ سلمان بن سلطان کیونکہ وہ شہزادہ احمد کے بھتیجےہونے کے ساتھ ساتھ ان کے داماد بھی ہیں ۔

مجتہد یہ بھی کہتےہیں کہ آل سعود خاندان میں شہزادہ احمد سے واقف افراد ان کے بارے میں یہ حقیقت جانتے ہیں کہ ان کی فطرت میں نہیں کہ وہ کسی کام میں پہل کریں البتہ انکی طرف سے شاہ سلمان اور ولی عہد کے خلاف بیان نے خاندان کے افراد میں امید پیدا کردی ہے، شاہ سلمان اور ولی عہد بن سلمان کے اقدامات اور پالیسیز کی وجہ سے شہزادہ احمد کے سرسے پانی گزر چکا ہے اوروہ انتہائی غصے میں ہیں جس کے باعث وہ حرکت میں آتے ہوئے پہل کرسکتے ہیں اور شہزادہ سلمان بن سلطان کی اس وقت شہزادہ احمد کے قریب موجودگی سے یہ سب کچھ ممکن ہے ۔

مجتہد کے حالیہ انکشافات سے واضح ہوتا ہے کہ شاہ سلمان اور ان کے ولی عہد محمد بن سلمان کے خلاف بیرون ملک موجود خاندان کے افراد متحرک ہو چکے ہیں مگر کیا یہ شہزادے کچھ کر پائیں گے؟

یہ بھی دیکھیں

عوام کا سوال

(ظہیر اختر بیدری) بعض دوستوں کو حیرت ہے کہ بعض ترقی پسند حلقوں کی جانب ...