ہفتہ , 20 اکتوبر 2018

یمن فوج اور عوامی رضاکار فورسز کے سعودی اتحاد کی کشتیوں پر کامیاب ڈرون حملے

عکس آرشیوی

صنعا (مانیٹرنگ ڈیسک) یمن کی فوج اور عوامی رضاکار فورسز نے سعودی عرب کی قیادت میں یمن کے خلاف جارحیت میں ملوث اتحادیوں کے ایک جنگی جہاز کو سمندر میں اور دو ڈرون طیاروں کو نشانہ بنا کر تباہ کر دیا ہے۔

یمن کی تحریک انصاراللہ کے قریبی ذرائع کے مطابق، اس حملے کے نتیجے میں یمنی ساحل میں سعودی اتحاد کی جنگی کشتی مکمل طور پر تباہ ہو گئی اور اس میں موجود تمام فوجی اہلکار ہلاک ہو گئے. سعودی اتحاد نے اب تک اس رپورٹ پر اپنے ردعمل کا اظہار نہیں کیا ہے۔

دوسری جانب بدھ کے روز جیزان کے علاقے جبل الشبکه میں یمن کی فوج اور عوامی رضاکار فورسز نے سعودی اتحاد کے جاسوسی کے دوطیاروں کو نشانہ بنا کر تباہ کر دیا۔ گزشتہ دنوں یمنی سرکاری فوج کے فضائی دفاعی سسٹم نے سعودی عرب سے ملحقہ علاقوں میں تین سعودی جاسوس طیاروں کو مار گرایا تھا۔

یاد رہے کہ 30 ستمبر کو بھی یمنی فوج اور عوامی مزاحمتی گروہوں نے سعودی عرب کی جنوبی بندرگاہ جیزان میں سعودی اتحاد کی کشتیوں پر کامیاب ڈرون حملے کئے جس میں کئی کشتیوں کو نشانہ بنایا گیا تھا.

سعودی عرب نے امریکا اور اسرائیل کی حمایت سے اور اتحادی ملکوں کے ساتھ مل کر چھبیس مارچ دوہزار پندرہ سے یمن پر وحشیانہ جارحیتوں کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے ۔ اس دوران سعودی حملوں میں دسیوں ہزار یمنی شہری شہید اور زخمی ہوئے ہیں جبکہ دسیوں لاکھ یمنی باشندے اپنے گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہوئے ہیں۔

یمن کا محاصرہ جاری رہنے کی وجہ سے یمنی عوام کو شدید غذائی قلت اور طبی سہولتوں اور دواؤں کے فقدان کا سامنا ہے۔ سعودی عرب نے غریب اسلامی ملک یمن کی بیشتر بنیادی تنصیبات اسپتال اور حتی مسجدوں کو بھی منہدم کر دیا ہے-

یہ بھی دیکھیں

پاکستان ‘ایف اے ٹی ایف’ گرے لسٹ سے اخراج کی شرائط پر پورا اترتا ہے

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک) عالمی ماہرین کے 9 رکنی وفد نے پاکستان کو ستمبر 2019 مں ...