ہفتہ , 20 اکتوبر 2018

خاشقجی کے لاپتہ یا پھر قتل ہونے کی وجہ سامنے آ گئی

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) مشہور سعودی اپوزیشن رہنما ’’عالم الدوسری‘‘ نے انکشاف کیا ہے کہ دو اکتوبر کو لاپتہ اور شاید قتل ہونے والے سعودی نظام مخالف صحافی اور تجزیہ نگار جمال خاشقجی ایک بہت بڑا اعلان کرنے جا رہے تھے جسے روکنے کے کیلئے سعودی ولی عہد محمد بن سلمان تیزی سے متحرک ہوئے تھے۔

ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے الدوسری کا کہنا تھا کہ خاشقجی ترکی آنے سے قبل لندن میں تھے جہاں ان کی ملاقات ایک قریبی دوست سے ہوئی تھی، جسے خاشقجی نے بتایا کہ وہ بہت جلد سعودی نظام کی مخالفت کا باقاعدہ طور پر اعلان کرتے ہوئے ایک اپوزیشن جماعت کی بنیاد ڈالنے جا رہے ہیں۔

الدوسری کے مطابق خاشقجی کے اس اقدام کے حوالے سے محمد بن سلمان کو اطلاع موصول ہوئی جس کے بعد وہ فوری طور پر خاشقجی کو روکنے کے لیے متحرک ہوئے۔

واضح رہے کہ جمال خاشقجی کی گزشتہ دو اکتوبر سے گمشدگی کے حوالے سے یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ بن سلمان کے حکم پر انہیں قتل کر دیا گیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

پاکستان ‘ایف اے ٹی ایف’ گرے لسٹ سے اخراج کی شرائط پر پورا اترتا ہے

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک) عالمی ماہرین کے 9 رکنی وفد نے پاکستان کو ستمبر 2019 مں ...