پیر , 19 نومبر 2018

سعودی سیکیورٹی ادارے دہائیوں سے شہریوں کو اغواء یا قتل کرنے کے حوالے سے بدنام: سابق سی آئی

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی انٹیلی جنس ادارہ سی آئی اے کے سابق چیف جان برینن نے کہا ہے کہ سعودی سیکیورٹی اداروں کی مہارت میں بڑے پیمانے پر کمی واقع ہو گئی ہے اور یہ کمی سابق سعودی وزیر داخلہ اور ولی عہد محمد بن نائف کی معزولی اور محمد بن سلمان کے ولی عہد مقرر ہونے کے بعد شروع ہوئی ہے۔

برینن کے مطابق بن نائف کے دور میں سعودی سیکیورٹی ادارے ان کے ماتحت تھے جبکہ حالیہ دور میں یہ تمام ادارے بن سلمان کے ماتحت ہیں۔

برنین کا مزید کہنا تھا کہ سعودی سیکیورٹی ادارے دہائیوں تک سعودی اور غیر سعودی شہریوں کو اغواء یا پھر قتل کرنے کے حوالے سے بدنام تھے، البتہ محمد بن نائف کے آنے کے بعد اس بدنامی میں کمی واقع ہوئی۔

جان برینن کا مزید کہنا تھا کہ بن سلمان کا معاملات سنبھالنے کے بعد سب کچھ بدتری میں بدل چکا ہے اور اگر یہ ثابت ہوتا ہے کہ جمال خاشقجی کے قتل میں سعودی حکومت ملوث ہے تو امریکہ اور عالمی برادری کو سعودی عرب کے خلاف سخت اقدامات اٹھانے ہوں گے کیونکہ یہ معاملہ انتہائی خطرناک ہونے کے ساتھ ساتھ خوفناک بھی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

نوجوان خواتین ہارٹ اٹیک کا زیادہ شکار ہونے لگیں

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک)اگرچہ ماضی میں خیال کیا جاتا تھا کہ دل کا امراض عمر رسیدہ ...