جمعرات , 15 نومبر 2018

سعودی فرمانروا اپنے بیٹے کو ولایتی عہدی کے عہدے سے ہٹا سکتے ہیں: برطانوی اخبار

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک) برطانوی اخبار دی ٹائمز نے اپنی حالیہ اشاعت میں ایک تبصرہ شائع کرتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی عالمی برادری کی نظروں میں ساکھ جمال خاشقجی کے معاملے کی وجہ سے کافی حد تک متاثر ہو چکی ہے، اس وقت بن سلمان کو ایک مجرم، ظالم اور سفاک شخص کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔

اخبار کا مزید کہنا تھا کہ سعودی فرمانروا اپنے بیٹے کو ولایتی عہدی کے عہدے سے ہٹا سکتے ہیں، البتہ وہ اس عہدے کو اپنے شاخ میں ہی رکھنے کو ترجیح دیں گے اور یوں قوی امکان ہے کہ بن سلمان کے چھوٹے بھائی شہزادہ خالد بن سلمان کو نئے ولی عہد کے طور پر مقرر کیا جائے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل امریکی اخبار نیویارک ٹائمز نے انکشاف کیا تھا کہ امریکہ میں متعین سعودی سفیر شہزادہ خالد بن سلمان واپس سعودی عرب چلے گئے ہیں اور قوی امکان ہے کہ وہ دوبارہ امریکہ بطور سعودی سفیر واپس نہ آئیں۔

یہ بھی دیکھیں

اسرائیلی حکومت کی جارحیت کے مقابلے میں تحریک مزاحمت کی کامیابی کا جشن

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)غزہ اور غرب اردن کے عوام نے غاصب صیہونی حکومت کے ...