بدھ , 21 نومبر 2018

خاشقجی قتل: سعودی عرب کا اعتراف، 18 افراد گرفتار

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب نے معروف صحافی جمال خاشقجی کو ترکی کے شہر استنبول میں سعودی عرب کے قونصلخانہ میں قتل کرنے کا اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے کہ جمال خاشقجی کے بہیمانہ قتل میں ملوث 18 افراد کو گرفتار کر لیا ہے۔

سعودی عرب کے اٹارنی جنرل نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ خاشقجی 2 اکتوبر کو استنبول میں سعودی عرب کے قونصلخانہ میں آئے جہاں ان کی ایک شخص کے ساتھ لڑائی ہو گئی اور اس لڑائي ميں وہ قتل ہو گئے۔ اٹارنی جنرل کا کہنا ہے کہ مشکوک افراد سعودی عرب کی حکومت سے وابستہ ہیں جو خاشقجی کو ترکی سے سعودی عرب منتقل کرنے کے لئے استنبول گئے تھے۔

سعودی عرب نے صحافی جمالی خشوگی کے قتل کی تصدیق کردی

جمال خشوگی کو استنبول میں سعودی سفارتخانے میں قتل کیا گیا، سعودی عرب نے صحافی جمالی خشوگی کے قتل کی تصدیق کردی

Gepostet von Iblagh News am Samstag, 20. Oktober 2018

سعودی عرب کی سرکاری خبررساں ایجنسی واس نے بھی اعلان کیا ہے کہ خاشقجی کے قتل میں ملوث 18 افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے جن کا تعلق سعودی حکومت سے ہے اور جو خاشقجی کو سعودی عرب منتقل کرنے کے لئے استنبول گئے تھے۔

واضح رہے کہ خاشقجی 2 اکتوبر کو اپنی ترک منگیتر کے ہمراہ استنبول میں سعودی عرب کے قونصلخانہ میں گئے جہاں اسے اغوا کے بعد قتل کر دیا گيا۔ باخبر ذرائع کے مطابق خاشقجی کے بہیمانہ قتل کے پیچھے سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان کا ہاتھ ہے۔

یہ بھی دیکھیں

پاکستان اور ملائیشیا کے درمیان ویزوں کے خاتمے کا جزوی معاہدہ

کوالالمپور(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان اور ملائیشیا میں ویزوں کے خاتمے کا جزوی معاہدہ،مشترکہ اعلامیہ جاری ہو ...