پیر , 21 اکتوبر 2019

صدر عباس نے مصرکی جانب سے غزہ کی ناکہ بندی کوحق بہ جانب قراردیا

13

فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ محمود عباس نے مصر کی جانب سے غزہ کی پٹی کی بین الاقوامی گذرگاہ رفح کی بندش کی حمایت کرتے ہوئے اس کی بندش کا قصور واراسلامی تحریک مزاحمت ’’حماس‘‘ کو ٹھہرایا ہے۔

مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ کی جانب سے اپنی قوم سے دشمنی پرمبنی یہ متنازع بیان کل بدھ کو سامنے آیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ مصر کو رفح کی گذرگاہ بندکرنے کا پورا پورا حق حاصل ہے۔ ان کے اس بیان پر فلسطین میں عوامی اور سیاسی حلقوں کی جانب سے سخت غم وغصے کی لہردوڑ گئی ہے۔

صدر عباس نے بیت لحم شہر میں صدارتی دفتر میں ایک تقریب سے خطاب کرتے کہا کہ غزہ کی پٹی کا بحران حل کرنے کے لیے فلسطینی تنظیموں نے جو تجاویز پیش کی ہیں تھیں اگرچہ ہمارے لیے قابل قبول نہ تھیں مگر ہم نے انہیں اس لیے بادل نخواستہ قبول کرلیا کیونکہ نے حماس کی جانب سے بھی بحران کےحل کے لیے غور کی یقین دہانی کرائی گئی تھی۔

صدر عباس نے حماس پر کئی الزامات بھی عاید کیے اور کہا کہ رفح گزرگاہ کی بندش کی ذمہ دار حماس ہے۔ کیونکہ حماس کی جانب سے رفح گذرگاہ کی مانیٹرنگ فلسطینی اتھارٹی کے حوالے نہیں جس پرمصر کے ساتھ بحران پیدا ہواْ اس کے علاوہ حماس نے قومی حکومت کی تشکیل میں قدم قدم پر رکاوٹیں کھڑی کیں اور فلسطین میں پارلیمانی انتخابات کے انعقاد کی بھی مخالفت کی ہے۔

دوسری جانب حماس نے صدر عباس کے تمام الزامات مسترد کردیے۔حماس کی جانب سے کہا گیا ہے کہ صدر عباس کے الزمات میں کوئی حقانیت نہیں ہے۔ وہ فلسطینی دشمنی پر مبنی بیانات جاری کررہے ہیں۔

صدر عباس نے اسرائیل کے ساتھ ایک بار پھر دوستی کا ہاتھ بڑھانے کے عزم کا اعادہ کیا اور کہا کہ وہ صہیونی ریاست کے ساتھ بامقصد اور تعمیری بات چیت کی بحالی کے لیے کسی بھی وقت اور کہیں بھی جانے کو تیارہیں۔ صدر ابو مازن نے فلسطین میں جاری تحریک انتفاضہ کی بھی مخالفت کی اور دبے لفظوں میں تحریک انتفاضہ کو شدت پسندی قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ فلسطینی اتھارٹی اپنے زیرانتظام علاقوں میں شدت پسندی کے فروغ کی کسی کو اجازت نہیں دے گی۔ انہوں نے اسرائیل سے بھی مطالبہ کیا کہ وہ مذاکرات کی بحالی کے لیے ان کی پیش کردہ تجاویز قبول کرے اور تعطل کاشکار بات چیت دوبارہ شروع کرنے کے لیے ماحول ساز گار بنایا جائے۔

 

یہ بھی دیکھیں

جاپان: خوفناک سمندری طوفان میں 65 ہلاکتوں کی تصدیق

ٹوکیو: جاپان کے وسطی اور شمالی علاقوں میں آنے والے تباہ کن سمندری طوفان ‘ہیگی …