بدھ , 21 نومبر 2018

ٹرمپ کی پریشانی کی وجہ سعودی عرب کے بہیمانہ اقدامات ہیں: مشرق وسطٰی تجزیہ نگار

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) مشرق وسطٰی کے سیاسی امور کے ایک ماہر اور تجزیہ نگار نے کہا ہے کہ ٹرمپ کی پریشانی کی وجہ سعودی عرب کے بہیمانہ اور ظالمانہ اقدامات ہیں جو کہ امریکہ کے اقتصادی معاملات کو نقصان پہچا سکتے ہیں

مشرق وسطٰی کے سیاسی امور کے ماہراور تجزیہ نگار ’’جعفر قنادباشی ‘‘ نے مقامی ذرائع ابلاغ کے ساتھ انٹریو میں کہاکہ اس وقت امریکہ اور بالخصوص ٹرمپ بہت زیادہ پریشان ہیں اور اس پریشانی کی وجہ سعودی عرب کے بہیمانہ اور ظالمانہ اقدامات ہیں جو کہ ان کے اقتصادی معاملات کو نقصان پہچا سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا جیسا کہ ٹرمپ اپنے ٹیوئٹ میں اس بات کا اعراف کر چکے ہیں کہ سعودی عرب ایران کے خلاف انکا ایک مہرہ ہے اور سعودی عرب کے اعتراف نے امریکہ کے لیے مشکلات ایجاد کر دی ہیں جو کہ داخلی و خارجی دباؤ کا باعث بن سکتا ہے کہ امریکہ سعودی عرب سے اپنے تعلقات میں تبدیلی لے آئے۔

موسوف تجزیہ نگار نے کہا کہ ٹرمپ کے دعوے کے مطابق وہ چاہتا ہے کہ ایران کی تیل کی فروخت کو صفر تک لے آئے اور ایران کی کمی کو سعودی عرب نقصان کے باوجود پوری کرے گا لیکن ان حالات میں ایسا ہوتا نظر نہیں آ رہا اور ٹرمپ کے خواب چکنا چور ہوتے نظر آ رہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ اس وقت مجبور ہو گیا ہے کہ دوغلے پن کا مظاہرہ کرے کیوں کہ اس وقت خاشقچی کے معاملے کو امریکی اخبارات نے صحافت کے خلاف اقدام قرار دیا ہے اور دوسری طرف سعودی عرب سے مفادات خطرے میں ہیں ورنہ یہی امریکہ یمن میں معصوم بچوں کے قتل میں خاموش تماشائی بنا ہوا تھا اور آج اس کو انسانی حقوق یاد آ گئے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

پاکستان اور ملائیشیا کے درمیان ویزوں کے خاتمے کا جزوی معاہدہ

کوالالمپور(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان اور ملائیشیا میں ویزوں کے خاتمے کا جزوی معاہدہ،مشترکہ اعلامیہ جاری ہو ...