جمعہ , 19 جولائی 2019

تلاشی کے دوران اسرائیل فوجیوں نے فلسطینی بچے کے سرمیں گولی ماردی

14

فلسطین کے مقبوضہ بیت المقدس میں گھر گھر تلاشی کی کارروائی کے دوران قابض صہیونی فوجیوں نے ایک فلسطیبی بچے کے سرمیں قریب سے گولی ماردی جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی ہوگیا ہے۔ زخمی بچے کو اسپتال لے جایا گیا ہے جہاں اس کی حالت خطرے میں بیان کی جاتی ہے۔

بیت المقدس میں العیسویہ قصبے کے ایک مقامی سماجی کارکن اور فالو اپ کمیٹی کے رکن محمد ابو الحمص نے بتایا کہ بدھ کو اسرائیلی فوجیوں نے قصبے میں گھروں میں تلاشی کاسلسلہ شروع کیا۔ اس دوران کچھ فلسطینی نوجوانوں نے اسرائیلی فوج کی غنڈہ گردی، گھروں میں گھس کر خواتین اور بچوں کو زود کوب کرنے پرسخت احتجاج کیا۔ قابض فوجیوں نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے ان پر لاٹھی چارج کیا، آنسوگیس کی شیلنگ کے ساتھ ساتھ ان پر دھاتی گولیوں سے بھی فائرنگ کی۔

اس دوران قابض فوجیوں نے احمد توفیق ابو الحمص نامی لڑکے کے سر میں گولی ماردی۔ زخمی بچے کو سرجری کے لیے اسپتال منتقل کیا گیا ہے جہاں وہ بدستور انتہائی نگہداشت وارڈ میں زیرعلاج ہے۔

یہ بھی دیکھیں

حافظ سعید کی گرفتاری 10 سال بعدعمل میں آئی، 2 برس سے دباؤ ڈالا جارہا تھا:ٹرمپ

واشنگٹن()امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کالعدم جماعۃ الدعوۃ کے امیر حافظ سعید کی گرفتاری کا …