منگل , 22 اکتوبر 2019

بھارتی کمپنیاں داعش کو بھاری اسلحہ اور دھماکا خیز مواد فراہم کررہی ہیں: یورپی یونین رپورٹ

images (1)

نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی اخبار نے یورپی یونین کی رپورٹ کے حوالے سے لکھاکہ اس وقت بھارت کی سات بڑی اسلحہ ساز فیکٹریاں دوسرے ممالک کو جو اسلحہ بھیج رہی ہیں وہ داعش کیلئے استعمال کیا جارہا ہے۔ یہ اسلحہ ترکی، شام اور دوسرے ممالک سے ہوکر داعش کے جنگجووں کے پاس جاتا ہے۔ داعش جنگجو شام میں 20 ممالک کی 51 کمپنیوں کے ہتھیار، اور دیگر جنگی سامان استعمال کر رہے ہیں۔ ان ممالک میں امریکا ، روس ، چین ، برازیل ،ایران ، بلیجیئم ، نیدرلینڈ اور جاپان شامل ہیں۔ داعش جنگجوئوں کو 7 بھارتی کمپنیاں جنگی آلات ، دھماکا خیز مواد اور دیگر سامان سپلائی کر رہی ہیں۔ بھارتی کمپنیاں قانونی طور پر لائسنس لے کر ترکی اور لبنان سامان برآمد کرتی ہیں جہاں سے شام روانہ کیا جاتا ہے۔ اس سے پہلے بھی بھارت میں داعش سے ہمدردی رکھنے والے ہزاروں افراد کا انکشاف ہوا تھا۔بھارت افغانستان میں دہشت گرد گروپوں سے تعلق قائم کرنے کی کوشش میں ہے تاکہ نہ صرف افغانستان میں عدم استحکام پیدا کیا جائے بلکہ پاکستان کو بھی نقصان پہنچانے کی سازش کی جائے۔ذرائع کے مطابق بھارت نہ صرف پاکستانی طالبان کی پشت پناہی میں مصروف ہے بلکہ افغانستان میںد اعش اور القاعدہ سے بھی اپنے تعلقات مضبوط کرنے کے لئے نئے اقدامات کررہا ہے۔مذکورہ کمپنیاں باقاعدہ حکومت سے حاصل کردہ لائسنس کے تحت کام کر رہی ہیں اور اسلحہ یا اس کے پرزہ جات برآمد کر رہی ہیں اخبار کے مطابق جب ان برآمد کنندگان سے رابطہ کرنے کی کوشش کی گئی تو ان کی طرف سے کوئی جواب نہ ملا یہ سروے سی آے آر یعنی کنفلیکٹ آرمامنٹ ریسرچ کی طرف سے کیا گیا ہے مذکورہ تنظیم مسلح تنازعات اور ان کے پس منظر پر کام کرتی ہے اس نے سات کمپنیوں کی تفصیلات فراہم کیں ان کمپنیوں میں سولر انڈسٹریز آئیڈیل انڈسٹریز’ گلف آئل کارپوریشن’ پریمئر ایکسپلو سیوز شامل ہیں یقینا ان کے علاوہ بھی کمپنیاں ہوں گی جن کے بارے میں معلوم نہیں ہوسکا بھارتی اخبار کی یہ رپورٹ بھارت کے چہرے پر پڑے نقاب کو سرکا رہی ہے یہ بھی واضح ہو رہا ہے کہ ان تنظیموں کے ذریعے اسلام اور مسلمانوں کے خلاف کام کروایا جارہا ہے اور عالم اسلام کو نقصان پہنچایا جارہا ہے داعش کی خلافت اگر اسلامی نقطہ نظر کے مطابق ہے تو بھارت سے وہ اسلحہ کیسے لے رہی ہے اور کیسے اسے مسلمان حکومتوں اور عوام کے خلاف استعمال کر رہی ہے اہم بات یہ ہے کہ ان کمپنیوں کے بارے میں الزامات سامنے آنے کے باوجود بھارت نے ان کے لائسنس منسوخ نہیں کئے جس سے یہ واضح ہوتا ہے کہ بھارت سرکار کی مرضی کے مطابق سب کچھ ہو رہا ہے متحدہ عرب امارات نے بھارت کے ایک درجن سے زیادہ شہریوں کو داعش سے تعلقات کی بناء پر ملک بدر کیا امارات کے خارجہ امور کے وزیر مملکت نے بھارت کو متنبہ کیا ہے کہ وہ خود کو داعش کے حملوں سے محفوظ نہ سمجھے بھارت کو جہاں دہشت گرد گروپوں کی سرپرستی سے باز رہنا چاہیے وہاں عالمی برادری کو بھی اس کی ان سرگرمیوں کا نوٹس لینا چاہیے۔

یہ بھی دیکھیں

امریکا نے یورپی مصنوعات پر بھاری ٹیکس نافذ کردیا

واشنگٹن: امریکا میں یورپی مصنوعات اب مزید مہنگی ہوجائیں گی کیونکہ امریکی حکومت کی جانب …