منگل , 22 اکتوبر 2019

یورپی یونین کی رکنیت کیلئے ترکی کو کئی عشرے انتظار کرنا پڑیگا: ڈیوڈ کیمرون

389015-david-1441363273-681-640x480

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک) ترکی کو یورپی یونین کی رکنیت جلد نہیں مل سکتی، اس مقصد کیلئے اسے کئی عشروں تک انتطار کرنا پڑے گا۔ ان خیالات کا اظہار برطانوی وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون نے ایک ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ رکنیت کے معاملے پر اختلاف کے باوجود مہاجرین کے مسئلے پر یورپی یونین اور ترکی کے مابین اشتراکِ عمل وقت کی ضرورت ہے ، ڈیوڈ کیمرون نے مزید کہا کہ یورپی یونین چھوڑنے سے برطانیہ کا اقتصادی نقصان ہو گا، اس لیے عوام کو چاہیے کہ ریفرنڈم میں یورپی یونین سے علیحدگی کی حمایت نہ کریں، تاہم انہوں نے کہا کہ یورپی اتحاد میں شامل رہنے کے باوجود یورو کو برطانیہ میں بطور ملکی کرنسی رائج نہیں کیا جائے گا۔ ڈیوڈ کیمرون نے جو کچھ عرصہ پہلے تک اپنے ملک کی یورپی یونین سے علیحدگی کے پُرجوش حامی تھے کہا کہ میں بھی بعض اوقات یورپی یونین کی رکنیت برقرار رکھنے کے خلاف سوچتا رہا ہوں، تاہم انہوں نے کہا کہ اقتٓصادی حقائق کو کسی صورت نظر انداز نہیں کیا جا سکتا، اس لیے میں عوام سے اپیل کرتا ہوں کہ چند ہفتوں بعد جب اس سوال پر ریفرنڈم ہو گا تو وہ یورپی یونین سے علیحدگی کی تجویز کو مسترد کر دیں۔

یہ بھی دیکھیں

امریکا نے یورپی مصنوعات پر بھاری ٹیکس نافذ کردیا

واشنگٹن: امریکا میں یورپی مصنوعات اب مزید مہنگی ہوجائیں گی کیونکہ امریکی حکومت کی جانب …