منگل , 11 دسمبر 2018

حکومت کے ابتدائی 100 روز: وزیرِاعظم آج قوم کو اعتماد میں لیں گے

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی حکومت کے ابتدائی 100 روز پورے ہونے کے بعد آج وزیرِاعظم عمران خان تقریب سے خطاب کریں گے اور عوام کو اعتماد میں لیں گے۔100 روزہ منصوبے کے سلسلے میں کنونشن سینٹر اسلام آباد میں ’رکھ دی ہے بنیاد نئے پاکستان کی‘ کے عنوان سے ایک خصوصی تقریب منعقد ہورہی ہے جس میں وزیرِ اعظم خطاب کریں گے۔

خطاب کے دوران وزیرِاعظم حکومت کی کارکردگی پر عوام کو اعتماد میں لیں گے جبکہ معیشت کی بہتری کے لیے اقدامات، 50 لاکھ گھروں کی تعمیر کے منصوبے، کفایت شعاری مہم، سماجی تحفظ کے پروگرام، خارجہ پالیسی، تعلیمی اصلاحات، احتساب اور لوٹی دولت کی واپسی کے لیے اقدامات کے بارے میں قوم کو آگاہ کریں گے۔

خیال رہے کہ 2 روز قبل وزیر اعظم ہاؤس میں اجلاس ہوا تھا، اس دوران عمران خان نے تحریک انصاف کی حکومت کی کارکردگی کا جائزہ لیا۔دریں اثنا وزیر اعظم کے مشیر برائے اسٹیبلشمنٹ محمد شہزاد ارباب نے 6 نکاتی 100 روزہ پلان پر بریفنگ دی تھی۔اس حوالے سے وزیر اعظم ہاؤس میں موجود ذرائع نے بتایا تھا کہ شہزاد ارباب نے اب تک حاصل کیے گئے اہداف کے ساتھ ساتھ مستقبل کے سنگ میل کے بارے میں عمران خان کو آگاہ کیا۔

خیال رہے کہ حکومت کا 100 روزہ پلان 6 نکات پر مرکوز تھا، جس میں طرز حکمرانی میں تبدیلی، وفاق کی مضبوطی، اقتصادی ترقی کی بحالی، ذراعت کی ترقی اور پانی کا تحفظ، سماجی خدمات میں انقلاب اور قومی سلامتی کو یقینی بنانا شامل تھا۔مجموعی طور پر حکومت کی جانب سے عوام سے 48 وعدے کیے تھے جن میں سے اکثر وعدوں پر کام ہی نہیں ہوسکا۔جن وعدوں پر کام ہوا ان میں سے ایک پایہ تکمیل کو پہنچا 4 جزوی طور پر مکمل ہوئے، 28 تکمیل کے مراحل میں ہیں جبکہ 16 کو شروع ہی نہیں کیا جاسکا۔

حکومت کے 100 روز اور اقدامات
پی ٹی آئی حکومت نے 100 دنوں میں کئی اہم سنگ میل عبورکرلیے اور حکومت سنبھالتے ہی وزیراعظم عمران خان نے تبدیلی کے پروگرام کا اعلان کیا۔ابتدائی 100 روز کے دوران 50 لاکھ گھر بنانے کے لیے پاکستان ہاؤسنگ اتھارٹی قائم ہوئی جبکہ چین سے پندرہ معاہدوں اور مفاہمت کی یادداشتوں پردستخط ہوئے۔

قطری وزیراعظم نے عمران خان سے ملاقات میں ایک لاکھ پاکستانیوں کو ملازمتیں فراہم کرنے کی پیش کش کی تھی۔علاوہ ازیں پاکستان کی کوششوں سے ہالینڈ حکومت اپنے ملک میں گستاخانہ خاکوں کا مقابلہ منسوخ کرنے پر مجبور ہوئی۔

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب میں شاہ محمودقریشی نے مسئلہ کشمیر اٹھایا اور کلبھوشن یادیو کے ذریعے پاکستان میں پھیلائی گئی بھارتی دہشتگردی کو دنیا کے سامنے بے نقاب کیا۔پی ٹی آئی حکومت کے اقتدار میں ہی بھارتی سکھوں کی خواہش پر کرتارپور راہداری بنانے کا آغازہوا۔

اپوزیشن کی تنقید
پی ٹی آئی حکومت کے ابتدائی 100 روز مکمل ہونے کے بعد اپوزیشن جماعتیں بھی میدان میں آگئیں اور حکومت پر تنقید کے تیر برسانا شروع کردیے۔پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی ) کے سیئنر رہنما خورشید شاہ اور مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے ابتدائی 100 روز میں کوئی کارکردگی سامنے نہیں آئی۔

یہ بھی دیکھیں

ریاست مدینہ میں سود نہیں ہوگا، بلاسود بینکاری کوفروغ دیں گے: وزیرمذہبی امور

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیر مذہبی امور نورالحق قادری کا کہنا ہے کہ ریاست مدینہ ...