ہفتہ , 17 اپریل 2021

بھکر:7 سالہ بچہ جنسی زیادتی کے بعد قتل، قاتل درندے آزاد

بھکر(مانیٹرنگ ڈیسک) یہ اندوہناک واقعہ بھکر کے علاقے کوٹلہ جام میں پیش آیا، پولیس مقدمہ درج کرنے کے بعد گھوڑے بیچ کر سو گئی۔زمین پھٹی نہ آسمان گرا، بھکر میں سات سالہ بچہ اغوا اور زیادتی کے بعد قتل، لاش کے ٹکڑے مختلف مقامات پر پھینک دیئے، اکیس روز گزرنے کے باوجود سر اور بازو نہ مل سکے، درندے بھی آزاد، انصاف کیلئے دربدر والدین کا دکھ ناقابل بیان ہے۔

بھکر میں اغوا کے بعد قتل ہونے والے سات سالہ حبیب کی میڈیکل رپورٹ میں زیادتی کی تصدیق ہو گئی،21 دن بعد بھی بچے کا آدھا دھڑ نہ مل سکا جبکہ پولیس سفاک قاتل کا سراغ بھی نہ لگا سکی۔

کوٹلہ جام کا رہائشی سات سالہ حبیب 13 دسمبر کو سکول پڑھنے گیا لیکن واپس نہ آیا۔ پولیس نے پہلے بے حسی دکھائی پھر میڈیا پر خبر آنے پر مقدمہ درج کیا۔ 24 دسمبر کو کوٹلہ جام سے پندرہ کلومیٹر دور کھیت سے کمسن کی سربریدہ لاش ملی تھی۔

میڈیکل رپورٹ کے مطابق بچے کی آٹھویں پسلی سے اوپر کا دھڑ نہیں ہے، لاش ملنے سے دو سے تین روز قبل بچے کو وحشیانہ طریقے سے زیادتی کا نشانہ کر قتل کیا گیا۔ معصوم کے والدین انصاف کے لئے دربدر ہیں لیکن پولیس اکیس روز بعد بھی سفاک قاتلوں کا سراغ لگانے میں ناکام ہے۔

سفاک قاتل نے بچے کو جنسی ہوس کا نشانہ بنانے کے بعد لاش کے ٹکڑے کر دیے۔ محمد حبیب کا آدھا دھڑ اور لاش کے ٹکڑے مختلف جگہوں سے برآمد ہوئے ہیں جبکہ باقی جسم کی تلاش جاری ہے۔

پوسٹ مارٹم رپورٹ کے مطابق حبیب کے ساتھ کئی بار جنسی زیادتی کی گئی جس کے بعد اسے بے رحمانہ طریقے سے قتل کر دیا گیا۔ لاہور ہائیکورٹ نے بھی حبیب کی گمشدگی کا نوٹس لیا ہے تاہم قاتل تاحال قانون کی گرفت سے آزاد ہے۔

یہ بھی دیکھیں

پاکستان جنوبی ایشیا میں امن و استحکام کا خواہاں، عارف علوی

پاکستان کے صدر عارف علوی نے علاقائی تنازعات کے پرامن حل کی ضرورت پر زور …