بدھ , 21 اپریل 2021

یہودی سازش :وادی اردن کو صہیونی ریاست میں ضم کیا جارہا ہے

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)اسرائیل کے ایک کثیرالاشاعت عبرانی اخبار”ہارٹز” نے کہا ہے کہ اسرائیلی ریاست وادی اردن کے علاقوں کو ضم کرنے کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہے۔عبرانی اخبار میں شائع کی گئی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ صہیونی حکومت وادی وادن کے بعض علاقوں کو آہستہ آہستہ اسرائیل میں ضم کرنے کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہے۔ گذشتہ ہفتے اسرائیلی فوج نے شمالی وادی اردن میں "خربہ ابو زیک” نامی ایک فلسطینی گائوں مسمار کردیا گیا جس کا مقصد وادی اردن کے اس علاقے کو صہیونی ریاست میں شامل کرنا اور وہاں پر موجود فلسطینیوں کو نکال باہر کرنا ہے۔

اخباری رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ خربہ ابو زیک قصبے میںسینکڑوں فلسطینی بدو آباد ہیں جن کا پیشہ کھیتی باڑی اور مال مویشی پالنا ہے۔ گذشتہ ہفتے اسرائیلی فوج نے ٹینکوں کے ذریعے فلسطینیوں کے کچے مکان مسمار کردیے تھے جس کے بعد وہاں کی فلسطینی آبادی کھلے آسمان تلے ہے۔

اخبار لکھتا ہے کہ گذشتہ ہفتے کے وسط میں اسرائیلی فوج نے فلسطینی دیہاتیوں کو حکم دیا تھا کہ وہ علاقہ خالی کردیں تاکہ فوج اس علاقے میں مشقیں کرسکے۔ اس وقت شہری گھروں سے نکل گئے۔ شام کو واپس آئے تو صہیونی فوج ان کے گھروں کو مسمار کرچکی تھی۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …