بدھ , 16 جنوری 2019

نئی شاہراہ کا اسرائیلی افتتاح، غرب اردن کو تقسیم کرنے کی ایک نئی سازش

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)فلسطینی تجزیہ نگار اور یہودی آباد کاری کے امور کے ماہر خلیل تفکجی نے کہا کہ حال ہی میں اسرائیل نے غرب اردن میں ایک نئی سڑک کی تعمیر کا افتتاح کیا ہے۔ یہ سڑک مقبوضہ مغربی کنارے کو مزید چھوٹے چھوٹے ٹکڑوں میں تقسیم کرنے سازش کا حصہ ہے۔

ایک پریس بیان میں خلیل تفکجی کا کہنا تھا کہ اسرائیل نے غرب اردن کی یہودی کالونیوں کو ایک دوسرے سے ملانے کے لیے تعمیر کی جا رہی ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ شاہراہ 70 مشرقی سڑکوں کا حصہ ہے جو متعدد مراحل میں تعمیر کی جائے گی۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ صہیونی ریاست القدس کے علاقوں العیزریہ، ابو دیس، دوار مستعوطنہ، معالیہ ادومیم، مشرقی السواحرہ، الزعیم فوجی چوکی اور کئی دوسرے مقامات کو باہم ملانےکے لیے نئی شاہراہ تعمیر کی جا رہی ہے۔

خلیل تفکجی نے خبردار کیا کہ اسرائیل مشرقی بیت المقدس کے سیکٹر "E1” میں نئے تعمیراتی منصوبوں کی آڑ میں فلسطینی بستیوں کو تنہا کرنے، انہیں ایک دوسرے سے کاٹنے اور یہودی کالونیوں کو تحفظ دینا چاہتا ہے۔ ایک طرف یہ شاہراہ "معالیہ ادومیم” کو بحر مردار کے ساتھ جوڑنے کی کوشش کی جا رہی ہے اور دوسری جانب اس کی تعمیر سے غرب اردن اور القدس کو ایک دوسرے سے کاٹنے اور فلسطینی شہریوں کو مزید تقسیم در درتقسیم کرناچاہتی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

فضائی آلودگی صحت کیلئے سب سے بڑا ماحولیاتی خطرہ قرار

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) فضائی آلودگی کو صحت کیلئے دنیا کا سب سے بڑا ماحولیاتی خطرہ قرار ...