جمعہ , 26 اپریل 2019

امن مذاکرات پاکستان میں کئے جائیں،امریکا کا افغان طالبان سے مطالبہ

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)امریکا نے افغان طالبان سے مذاکرات کا ایک دور پاکستان میں کرانے کا مطالبہ کر تے ہوئے کہا ہے کہ اس حوالے سے افغان طالبان کے جواب کا انتظار ہے۔

امریکی صدر ٹرمپ کے نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد نے پاکستانی حکام سے ملاقات میں مفاہمتی عمل پر تبادلہ خیال بھی کی، وہ آج وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات کریں گے۔

ادھر افغان صدر اشرف غنی نے وزیراعظم عمران خان کو ٹیلی فون کیا ہے،گفتگو کے دورن وزیر اعظم عمران خان نے اشرف غنی کی افغانستان کے دورے کی دعوت قبول کر لی۔

علاوہ ازیں پاکستان کے دورے پر آئے ہوئے امریکی نمائندہ خصوصی برائے افغان امور زلمے خلیل زاد نے گزشتہ روز ریزالیوٹ سپورٹ مشن کے کمانڈر جنرل آسٹن اسکاٹ کے ہمراہ جی ایچ کیو میں چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقات کی، جس دوران علاقائی سلامتی کی صورت حال، افغان امن اور مفاہمتی عمل بارے تبادلہ خیال کیا گیا۔

آرمی چیف نے اس موقع پر خطے میں امن و استحکام کیلئے کوششیں جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغانستان میں امن پاکستان کیلئے اہمیت کا حامل ہے ۔
امریکا کے اعلیٰ سطح کے وفد نے امن عمل کی طرف پاکستان کی کوششوں کی تعریف کی۔

امریکی صدر کی نائب معاون اور جنوبی و وسطی ایشیاء کیلئے سینئر ڈائریکٹر اور پاکستان کیلئے امریکی ناظم الامور لیزا کرٹس بھی اس موقع پر موجود تھیں۔

یہ بھی دیکھیں

پاکستان اب کسی بھی افغان تنازع کا حصہ نہیں بنےگا: وزیراعظم

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہےکہ افغانستان کے تنازعات نے افغانستان اور …