پیر , 24 جون 2019

سینیٹ قائمہ کمیٹی بل منظور:شادی کیلئے عمر کی حد 18 سال مقرر

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے انسانی حقوق نے شادی کے لیے عمر کی تعین کا بل منظور کرلیا۔سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر کی زیرصدارت سینیٹ کی قائمہ کمیٹی انسانی حقوق کا اجلاس ہوا جس میں کمیٹی نے کم عمری کی شادی کے تعین کا بل منظور کرلیا جس کے تحت بچوں کی بلوغت کی حد 18 سال مقرر کی گئی ہے۔

اجلاس میں شریک سینیٹر عثمان کاکڑ نے کہا کہ بچوں کی شرح اموات کی بڑی وجہ کم عمر میں شادیاں ہیں، شناختی کارڈ کے لیے عمر 18 سال ہے تو شادی کی عمر بھی یہی ہونی چاہیے، لڑکی کے ساتھ لڑکے کی شادی کی عمر بھی 18 سال ہونی چاہیے اور شادی کیلئے 18 سال عمر کا قانون پارلیمنٹ سے منظور ہونا چاہیے۔

اس موقع پر وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری نے کہا کہ حکومت کو 18 سال شادی کی عمر کی حد مقرر کرنے پر کوئی اعتراض نہیں، مجوزہ بل آئندہ ماہ پارلیمنٹ میں بحث کیلئے پیش کردیا جائے گا اور بل کابینہ کی منظوری کیلئے بھی بھجوا دیا گیا ہے۔شیریں مزاری کا کہنا تھا کہ اسلام اور شریعہ کے مخالف کوئی قانون سازی نہیں کی جائے گی، بچے بچیوں دونوں کے حقوق کا خیال رکھنا ہوگا۔

یہ بھی دیکھیں

سعودی عرب نے غیر ملکیوں کیلئے رہائشی اسکیم متعارف کروادی

ریاض: سعودی عرب نے نئی خصوصی رہائشی اسکیم پیش کردی جس کا مقصد پیٹرول سے …