جمعہ , 23 اپریل 2021

غزہ کے علاقے کو خطرناک انسانی المیے کا سامنا ہے: اقوام متحدہ

نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک)اقوام متحدہ نے خبردار کیا ہے کہ فلسطین کا محصور علاقہ غزہ کی پٹی غیر مسبوق انسانی المیے کی طرف بڑھ رہا ہے۔ اقوام متحدہ کی طرف سے غزہ کی پٹی کے محصورین کے لیے 14 کروڑ 80 لاکھ ڈالر کی فوری امداد فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ عالمی ادارے کا کہنا ہے کہ رواں سال کے دوران غزہ کے محصورین کے لیے ان کی زندگیاں بچانے کے لیے 2019ء کے دوران پندرہ کروڑ ڈالر کی امداد درکار ہوگی۔

نیویارک میں اقوام متحدہ کے ترجمان اسٹیفن ڈوگریک نے ایک پریس کانفرنس سےخطاب میں کہا کہ غزہ کا علاقہ ایک بڑے انسانی المیے کا سامنا کررہا ہے اور آنے والے دونوں میں یہ انسانی المیہ اور بھی زیادہ خوفناک شکل اختیار کرسکتا ہے۔

اقوام متحدہ کے ترجمان کا کہنا تھا کہ غزہ کی پٹی میں 30 مارچ 2018ء سے جاری مظاہروں‌ کے دوران اسرائیلی فوج کی طرف سے تشدد کا استعمال کر کے ہزاروں فلسطینیوں کو زخمی کردیا۔ ان ہزاروں زخمیوں کے علاج کے لیے غزہ کے اسپتالوں میں طبی سہولیات کا فقدان ہے۔

اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ غزہ کی پٹی کے اسپتالوں میں صحت کا ایک بحران پیدا ہوسکتا ہے۔ غزہ کے کئی اسپتالوں میں بعض بنیادی نوعیت کی ادویات کی مقدار صفر ہوچکی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

میزائل تجربے پر تنقید : شمالی کوریا نے اقوام متحدہ پر چڑھائی کردی

شمالی کوریا نے میزائل ٹیسٹ کے بعد پابندیوں کی تجویز پر اقوام متحدہ پر چڑھائی …