ہفتہ , 17 اپریل 2021

گزشتہ ماہ اسرائیلی فوج کے ہاتھوں 67 بچوں سمیت 380 فلسطینی گرفتار

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)اسرائیلی فوج کی جانب سے جنوری 2019ء کے دوران فلسطینیوں کی گرفتاریوں کا سلسلہ جاری رہا۔ جنوری 2019ء کے پہلے مہینے میں صہیونی فوج نے پانچ خواتین اور 67 بچوں سمیت 380 فلسطینیوں‌کو حراست میں‌ لیا۔

مرکز اسیران اسٹڈی سینٹر کی طرف سے ہفتے کے روز جاری ہونے والی رپورٹ میں‌بتایا گیا ہے کہ جنوری کے دوران اسرائیلی فوج نے غزہ کی پٹی سے پانچ ماہی گیروں سمیت 12 فلسطینیوں کو حراست میں لیا جب کہ چھ فلسطینیوں کو غزہ کی شمالی سرحد عبور کرنے کی پاداش میں گرفتار کیا گیا۔

ادھر مقبوضہ مغربی کنارےمیں قائم اسرائیلی جیل ‘عوفر’ میں صہیونی فوج نے 2007ء کے بعد پہلی بار قیدیوں پر بدترین تشدد کیا۔قابض فوج اور صہیونی جلادوں نے قیدیوں کے کمروں میں گھس کر انہیں ہولناک تشدد کا نشانہ بنایا جس کے نتیجے میںسینکڑوں قیدی زخمی ہوگئے۔

جنوری کے دوران اسرائیلی حکام کی طرف سے 55 فلسطینیوں کے لیے انتظامی حراست کے احکامات جاری کیے گئے۔ ان میں سے 18 نئے اور 37 پہلے سے قید فلسطینیوں کو انتظامی قید کی سزائیں دی گئیں۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …