پیر , 15 جولائی 2019

انقلاب اسلامی کی 40 ویں بہار عالم اسلام کو مبارک: شیعہ سنی علماء

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)متحدہ علماء محاذ پاکستان کے چیئرمین علامہ عبدالخالق فریدی، بانی سیکریٹری جنرل مولانا محمد امین انصاری، سرپرست مولانا انتظارالحق تھانوی، مرکزی صدر علامہ مرزا یوسف حسین، علامہ سید عقیل انجم، علامہ قاضی احمد نورانی صدیقی، علامہ علی کرار نقوی، مولانا سلیم اللہ ترکی، مولانا منظرالحق تھانوی سمیت تمام مکاتب فکر کے علماء کرام و شخصیات نے انقلاب اسلامی ایران کی سالگرہ مبارکباد پیش کی ہے۔

پاکستان کے شیعہ اور سنی علماء کرام نے انقلاب اسلامی کی 40 ویں سالگرہ کے موقع پر بانی انقلاب اسلامی حضرت امام خمینیؒ کو خراج عقیدت اور ایرانی قوم کو مبارکباد پیش کی ہے۔متحدہ علماء محاذ پاکستان کے رہنماوں نے کہا کہ ایران نے اب تک مسئلہ فلسطین کو اجاگر کرنے اور فلسطینیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے جو مؤثر اور دلیرانہ کردار ادا کیا ہے، اس نے مسئلہ فلسطین کو عالم اسلام کا صف اول کا مسئلہ بنا دیا ہے۔

علماء کرام نے کہا کہ مسئلہ فلسطین کو اجاگر کرنے کے حوالے سے ایرانی کردار کے باعث ناصرف فلسطینیوں کی جدوجہد میں تیزی پیدا ہوئی ہے، بلکہ اس سے اہل کشمیر کو بھی تازہ ولولہ اور نیا جذبہ ملا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ عالم اسلام فلسطین و کشمیر کو اپنا بنیادی اولین مسئلہ سمجھ کر اپنا مؤثر کردار ادا کرے۔

علماء کرام نے کہا کہ پاکستان اسلام کے نام پر کلمئہ توحید کی بنیاد پر معرض وجود میں آیا، بدقسمتی سے آج تک مقاصد پاکستان کے حقیقی تقاضوں کو نظرانداز کرکے ملک کو موجودہ ابتر تشویشناک صورتحال سے دوچار کر دیا ہے، پاکستان کو امریکا سمیت عالمی استعماری شکنجہ سے نجات دلانے کیلئے پُرامن اسلامی انقلاب کی ضرورت ہے۔
علماءکرام نے کہا کہ پاکستان میں شیعہ سنی کا کوئی مسئلہ نہیں ہے، امریکا، اسرائیل، اور استعماری قوتیں مذہب و نسل کے نام پر فرقہ واریت، دہشتگردی، عصبیت و منافرت کی آگ بھڑکا کر پاکستان کو کمزور منتشر اور اپنا محکوم بنانا چاہتے ہیں، جسے علماءکرام اپنے اتحاد سے کامیاب نہیں ہونے دینگے۔

یہ بھی دیکھیں

پی آئی اے کے فضائی میزبانوں کیلئے نیا حکم نامہ جاری

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) پی آئی اے انتظامیہ نے فضائی میزبانوں کے لئے ایمرجنسی چھٹی صرف انتہائی …