جمعہ , 23 اپریل 2021

مراکش بھی جارح سعودی اتحاد چھوڑ گیا

رباط (مانیٹرنگ ڈیسک)حکومت مراکش نے یمن کے خلاف قائم سعودی اتحاد سے علیحدگی کا اعلان کرتے ہوئے ریاض میں تعینات اپنے سفیر کو واپس بلا لیا ہے۔ذرائع کے مطابق ایک مراکشی عہدیدار نے کہا ہے کہ ان کا ملک سعودی عرب کی سرکردگی میں قائم فوجی اتحاد کے اجلاسوں اور کارروائیوں میں حصہ نہیں لے رہا ہے ۔اس سے پہلے مراکش کے وزیر خارجہ ناصر یوریتا نے بھی کہا تھا کہ ان کے ملک نے یمن کے خلاف قائم سعودی اتحاد کے بہت سے وزارتی اجلاسوں اور فوجی مشقوں میں شرکت سے گریز کیا ہے۔سعودی عرب نے متحدہ عرب امارات اور چند دوسرے ملکوں کے ساتھ مل کر چھبیس مارچ دوہزار پندرہ سے یمن کو فوجی جارحیت کا نشانہ بنانے کے علاوہ اس کا زمینی، فضائی اور سمندری محاصرہ بھی کر رکھا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …