پیر , 27 جنوری 2020

جب ایک شخص کی ناک میں دانت اگ گیا

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک)ایک شخص کو اس وقت زندگی کا سب سے بڑا جھٹکا لگا جب ڈاکٹروں نے اسے 2 سال سے بند نتھنے کے پیچھے چھپی اصل وجہ بتائی۔اس شخص نے ڈاکٹروں سے رجوع کرکے بتایا تھا کہ اس کا بایاں نتھنا 2 سال سے مسائل کا شکار ہے اور سونگھنے کی حس سے محروم ہوگیا ہے۔

اور جب ڈاکٹروں نے اس کی وجہ دریافت کی تو وہ کوئی وائرس یا بیکٹریا انفیکشن نہیں بلکہ ماہرین نے دریافت کیا کہ ایک دانت اس شخص کی ناک میں اگ گیا تھا۔جی ہاں واقعی ایک دانت ناک میں اگ گیا تھا اور چونکہ ناک کسی دانت کی جگہ نہیں تو ڈاکٹروں نے اسے نکال دیا۔

طبی جریدے بی ایم جے کیس رپورٹس میں شائع مقالے میں بتایا کہ یہ انوکھی تشخیص ڈنمارک کے آراہوس یونیورسٹی ہاسپٹل میں داخل ہونے والے 59 سالہ شخص میں ہوئی جس کا نام بتایا نہیں گیا۔ڈاکٹروں نے جب اس کا سی ٹی اسکین دریافت کیا تو انہوں نے نتھے میں ہوا کے گزرنے کی جگہ میں کچھ ٹھوس دریافت کیا، جس پر ڈاکٹروں کو لگا کہ وہ کئی گلٹی ہے۔

جب سرجری کے لیے اسے لے جایا گیا تو پھر ڈاکٹروں کے سامنے دانت کا انکشاف ہوا جو ناک میں جمع ہونے والے مواد میں چھپا ہوا تھا۔یہ واضح نہیں کہ ناک میں دانت کیسے اگ گیا کیونکہ اس طرح کے واقعات شاذ و نادر ہی سامنے آتے ہیں اور عام طور پر مردوں میں ہی اس کی تشخیص ہوتی ہے۔

اکثر اوقات کسی فرد کی ناک میں دانت اگنے کی وجہ ٹراما یا انفیکشن ہوتا ہے یا ہونتوں کی نشوونما کو مسائل بھی اس کے پیچھے ہوسکتے ہیں۔مگر اس کیس میں کوئی واضح وجہ دریافت نہیں کی جاسکی اور ماہرین کے خیال میں یہ دانت اس شخص کی زندگی میں کافی عرصے سے ہوگا مگر نتھنے کے ورم کی وجہ سے اسے مسائل کا سامنا 2 سال پہلے ہوا۔سرجری کے ایک ماہ بعد اب وہ مریض مکمل طور پر صحت یاب ہوچکا ہے اور اب اسے کسی قسم کے مسائل کا سامنا نہیں۔

یہ بھی دیکھیں

6 ہزار 500 میٹر لمبا، دنیا کا سب سے بڑا کیک صرف چار گھنٹے میں‌ تیار

نئی دہلی: بھارتی ریاست کیرالا کے 1500 بیکرز اور باورچیوں نے دنیا کا سب سے …