جمعرات , 20 جون 2019

نیتن یاھو کے خلاف تین کرپشن کیسز میں فرد جرم عاید کرنے کا فیصلہ

یروشلم (مانیٹرنگ ڈیسک)اسرائیلی حکومت کے مشیر قانون افیخائی منڈلبلیٹ نے کہا ہے کہ وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو کے خلاف بدعنوانی کے تین کیسز میں فرد جرم عاید کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔عبرانی اخبار’یدیعوت احرونوت’ نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ فرد جرم میں نیتن یاھو کے خلاف تین کرپشن کیسز کی باقاعدہ سماعت کی تاریخ کا بھی تعین کیا جائے گا۔ وزیراعظم کے خلاف بدعنوانی کے مقدمات میں 57 صفحات پرمشتمل فرد جرم شائع کی جائے گی۔

فرد جرم میں وزیراعظم کے خلاف کیس نمبر 1000 پہلا کیس ہے جس میں فرد جرم عاید کی جائے گی۔ اس میں وزیراعظم نیتن یاھو پر ایک کاروباری شخصیت ارنون میلچین سے بیش قیمت تحائف وصول کرنے کے عوض انہیں تجارتی سہولیات دینے کا الزام ہے۔ اس کے علاوہ ان کے امریکی ویزے میں 10 سال کی توسیع کرانے میں بھی نیتن یاھونے امریکا سے سفارش کی تھی۔

فرد جرم میں کہا گیا ہے کہ نیتن یاھو نے 2011ء اور 2016ء کے دوران قیمتی تحائف وصول کیے تھے۔ قیمتی شیمپو او کاسمیٹیکس جن کی مالیت 78 ہزار 202 ڈالر اور بیش قیمت سیگریٹ جن کی مالیت ایک لاکھ 13 ہزار 907 ڈالر تھی وصول کیے تھے۔نیتن یاھو کے خلاف دوسرے کرپشن کیس کو اسرائیلی میڈیا میں 4000 کے عدد اور تیسرے کیس کو 2000 کے عدد سے ظاہر کیا گیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

دہشت گردوں کی حمایت کرنے والوں پر شام ایران اور روس کی نکتہ چینی

نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک)شام، ایران اور روس کے نمائندوں نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے …