پیر , 16 دسمبر 2019

روس سے ‘ایس 400’ کی خریداری کی کوششوں پر امریکی دھمکی اور دباؤ مسترد کرتے ہیں:ترک صدر

انقرہ (مانیٹرنگ ڈیسک)ترکی نے امریکی دباو کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ہم امریکہ کے دباو میں آنے والے نہیں ہیں۔ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے امریکا کی طرف سے روسی فضائی دفاعی نظام ‘ایس 400′ کی خریداری کی کوششوں پر دھمکی اور دباو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ انقرہ روس سے فضائی دفاعی نظام’ایس 400’ کی خریداری کے فیصلے سےپیچھےنہیں ہٹے گا۔ انہوں نے کہا کہ اس کے بعد اگلے مرحلے میں ‌ترکی روس سے ‘ایس 500’ دفاعی نظام خریدنے پر بھی غور کرے گا۔

خیال رہے کہ امریکا نے ترکی کو خبردار کیا ہے کہ اگر اس نے روس سے اس کا تیار کردہ ایس 400 دفاعی نظام خریدا تو واشنگٹن انقرہ کے ساتھ ایف 35 طیاروں کی تیاری کا معاہدہ منسوخ کردے گا۔ امریکا کا کہنا ہے کہ روس کا ایس 400 دفاعی نظام نیٹو کے رکن ممالک کی سلامتی کے لیے خطرہ ہے۔امریکا کے اس دھمکی آمیز بیان کے جواب میں ترک صدر جب طیب اردوغان نےکہا کہ امریکا ترکی کو تجارتی اقدامات کےذریعے سبق نہ پڑھائے۔ ترکی کے اپنے تیار کردہ تجارتی اور دفاعی منصوبے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

سوڈان کے سابق صدر عمر البشیر کو 2 سال قید کی سزا

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق سوڈان کی ایک عدالت نے سابق  75 سالہ …