جمعرات , 13 مئی 2021

فوجی ٹوپیاں اور آئی سی سی کا کوڈ آف کنڈکٹ

بھارت کی کرکٹ ٹیم نے آسٹریلیا کے خلاف تیسرے ون ڈے میں بھارتی فوج کی ٹوپیاں پہن کر سپورٹس میں سپرٹ کی دھجیاں اڑائی ہیں۔ کھیل باہمی احترام و تعاون‘ دوستی اور بھائی چارے کی علامت اور کھلاڑی امن کے سفیر ہوتے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ دنیا بھر میں کھیل کو ممالک کے اختلافات کے خاتمہ اور تنازعات کے حل کے لئے تو استعمال کیا جاتا ہے مگر کم و بیش تمام کھیلوں کے کوڈ آٹ کنڈکٹ میں کھلاڑیوں پر ایسی تمام سرگرمیوں پر پابندی ہوتی جن سے کسی ملک و قوم کے جذبات مجروح ہونے کا امکان ہویا کسی قسم کے تعصب کو فروغ ملتا ہو۔

ماضی میں برطانیہ کے کھلاڑی معین علی نے بھارت کے خلاف تیسرے ون ڈے کے دوران سیو فلسطین اور فری فلسطین لکھا بریسلٹ بینڈ پہنا تھا۔ دنیا بھر کے مسلمانوں کے جذبات کی پرواہ نہ کرتے ہوئے اسے آئی سی سی نے اپنے کوڈ آف کنڈکٹ کی خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے معین علی کے خلاف فیصلہ سنایا تھا۔ گزشتہ روز آسٹریلیا کے خلاف بھارت کی پوری ٹیم نے فوجی ٹوپیاں پہن کر کھیل میں جنگ کا رنگ بھرنے اور امن کے بجائے جنگ اور تعصب کو فروغ دیا ہے۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ آئی سی سی بھارت کی ٹیم کے خلاف کیا ایکشن لیتی ہے۔ واضح رہے بھارتی کرکٹ ٹیم پہلے ہی پاکستان کے خلاف نہ کھیلنے کا اعلان کر کے آئی سی سی کے کوڈ آف کنڈکٹ کی دھجیاں اڑا چکی ہے۔ دنیا بھر کے امن پسندوں کی نظریں آئی سی سی کے فیصلے کی منتظر ہیں۔ بشکریہ 92 نیوز

یہ بھی دیکھیں

قاسم سلیمانی اور مکتب مقاومت

مقدمہ: شہداء کے سردار کی عظیم شخصیت کے بارے میں کچھ لکھنا بہت دشوار ہے …