منگل , 11 مئی 2021

ٹرمپ کی اسرائیل دوستی، عجیب و غریب دعویٰ

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکا کے صدر نے ایک عجیب و غریب دعوی کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر وہ اسرائیل میں وزارت عظمی کے انتخابات میں شریک ہوں تو انہیں سب سے زیادہ ووٹ ملیں گے۔ڈونلڈ ٹرمپ نے ریپبلکن پارٹی کی قومی کمیٹی کے حامیوں ایک گروہ سے ملاقات میں کہا کہ اسرائیل میں وزارت عظمی کا انتخابات لڑنے کی حالت میں انہیں 98 فیصد ووٹ حاصل ہوتے ۔ ایکسس نیوز ویب سائٹ نے تین باخبر ذرائع کے حوالے سے رپورٹ دی ہے کہ امریکی صدر نے یہ بیان فلوریڈا میں پارٹی کے حامیوں کے درمیان دیا تھا۔ رپورٹ کے مطابق سیکورٹی اہلکاروں نے ٹرمپ کی تقریر لیک ہونے سے روکنے کے لئے حاضرین سے کہا کہ وہ اپنے موبائل فون مقناطیسی تھیلیوں میں رکھیں ۔

ٹرمپ نے اپنی اس تقریر میں متعدد موضوعات پر گفتگو کی ۔ انہوں نے اپنی حکومت کی جانب سے صیہونی حکومت کی مدد جاری رکھنے پر تاکید کی اور کہا کہ وہ امریکا کے سفارتخانے کو تل ابیب سے بیت المقدس منتقل کرنے کے اپنے فیصلے پر ڈٹے ہوئے ہیں۔انہوں نے اسی تناظر میں کہا کہ اسرائیلی عوام انہیں پسند کرتے ہیں اور اگر وہ اسرائیل میں وزارت عظمی کے انتخابات میں کھڑے ہوتے تو انہیں بہت زیادہ ووٹ ملتے ۔ ٹرمپ نے اسی کے ساتھ ڈیموکریٹس پر یہودی مخالف ہونے کا الزام بھی عائد کیا تھا۔

یہ بھی دیکھیں

میزائل تجربے پر تنقید : شمالی کوریا نے اقوام متحدہ پر چڑھائی کردی

شمالی کوریا نے میزائل ٹیسٹ کے بعد پابندیوں کی تجویز پر اقوام متحدہ پر چڑھائی …