جمعہ , 7 مئی 2021

اسرائیل نے غرب اردن کو انتخابی پروپیگنڈے کا میدان بنا لیا: عوامی محاذ

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)فلسطین کی ایک بڑی سیاسی جماعت ‘عوامی محاذ’ برائے آزادی فلسطین نے غرب اردن کو اسرائیلی انتخابی پروپیگنڈے کا میدان بنائے جانے کی شدید مذمت کی ہے۔ عوامی محاذ کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہےکہ اسرائیلی فوج صہیونی حکومت کی سرکاری سرپرستی میں غرب اردن میں جنگی جرائم، فلسطینیوں کے قتل عام اور انسانیت کے خلاف جرائم کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے اور فلسطینیوں کے خون کی قیمت پر اسرائیلی انتہا پسند 9 اپریل کو کنیسٹ کے ہونے والے انتخابات جیتنا چاہئے ہیں۔

عوامی محاذ نے خبردار کیا ہے کہ صہیونی حکومت نے غرب اردن میں جنگی جرائم کو اپنی انتخابی مہم کا میدان بنا لیا ہے۔ فلسطینیوں‌کے قتل کو انتخابات میں کامیابی کے جرائم کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔عوامی محاذ نے اریحا میں ایک فلسطینی نوجوان سلامہ کعابنہ کی شہادت کو جنگی جرم قرا دیا۔ بیان میں فلسطینی شہداء واسیران کے مالی وظائف روکنے اور فلسطینی اتھارٹی کے ٹیکسوں کی ادائی روکنے کو بھی نسل پرستانہ اور فلسطین دشمنی پرمبنی پالیسی قرار دیا۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …