جمعہ , 14 مئی 2021

اسرائیل سے دوستی کرنے والے ملک قبلہ اول گنوانا چاہتے ہیں: علماء کونسل

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)بین الاقوامی علماء اتحاد نے مسجد اقصیٰ میں یہودی آباد کاروں کی حالیہ اشتعال انگیزی کی شدید مذمت کرتے ہوئے صہیونی دشمن سے تعلقات قائم کرنے والے ممالک کو بھی سخت تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ دوحہ میں علماء کونسل کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ قبلہ اول میں جو کچھ ہو رہا ہے وہ سب ان ممالک کا کیا دھرا ہے جو اسرائیلی دشمن سے دوستی کے لیے کوشاں ہیں‌۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ عرب ممالک کو قبلہ اول اور فلسطینیوں کے حقوق کے لیے حرکت میں آنا تھا مگر وہ صہیونی ریاست کے ساتھ تعلقات کے لیے لپکے جا رہے ہیں۔بیان میں علماء کونسل نے مسلمان ممالک کی اقوام اور حکومتوں پر زور دیا کہ وہ قبلہ اول کے دفاع اور اس کے تمام دروازوں کو فلسطینی نمازیوں کے لیے کھلوانے کی خاطر تمام وسائل بروئے کار لائیں۔

خیال رہے کہ گذشتہ منگل کو یہودی آباد کاروں اور اسرائیلی فوج کی بڑی تعداد نے مسجد اقصیٰ کے قبۃ الصخرہ میں گھس کر نمازیوں کو تشدد کا نشانہ بنایا تھا۔ اس واقعے کے بعد عالم اسلام کی طرف سے شدید رد عمل سامنے آیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …