منگل , 21 جنوری 2020

داعش کی حمایت، اردن کے 11 شہریوں کو پانچ سال کی سزا

عمان(مانیٹرنگ ڈیسک) ادرن کی فوج داری عدالت نے دہشت گرد تنظیم داعش کی حمایت میں 11 اردنی شہریوں کو پانچ سال قید کی سزا سنا دی۔تفصیلات کے مطابق اردن کی ایک فوج داری عدالت نے داعش کی حمایت کے الزام میں 11 اردنی باشندوں کو پانچ سال قید کی سزا سنا دی۔غیرملکی خبر رساں اداروں کے مطابق ملزمان میں تین مختلف جامعات کے طلباء شامل ہیں۔ انہیں داعش کی حمایت کی پاداش میں دو سے پانچ سال قید با مشقت کی سزا سنائی گئی ہے۔

ملزمان پر سوشل میڈیا پر دہشت گرد تنظیموں کی حمایت اورفیس بک کے ذریعے داعش کی حمایت میں پروپگنڈہ کرنے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔ تمام ملزمان کی عمریں بیس اور تیس سال کے درمیان ہیں۔فوج داری عدالت کی جانب سے ملزمان کو یہ سزائیں سوشل میڈیا پر ان کی طرف سے پوسٹ کردہ بیانات اور مواد کی بنیاد پر سنائی گئی ہیں۔عدالت میں زیرسماعت دہشت گردی کے کیس میں زیادہ تر ملزمان پر النصرہ فرنٹ، داعش اور دیگر دہشت گرد گروپوں کی حمایت کا الزام عائد کیا گیا ہے۔یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے متحدہ عرب عمارات کی عدالت نے سوشل میڈیا پر شدت پسندی کی ترغیب دینے والے دو افراد کو سائبر کرائم کے قوانین کے تحت قید اور جرمانے کی سزا سنائی تھی۔

یہ بھی دیکھیں

اتحادی افواج عراق سے باہر نکلنے کی فکر کریں : حزب اللہ عراق کے ترجمان محمد محیی

حزب اللہ عراق کے ترجمان نے عراق سے غیر ملکی فوجیوں کو باہر نکالنے کے …