جمعرات , 20 جون 2019

ڈنمارک: شدت پسند رہنما کی قرآن کریم کی بے حرمتی،مسلمانوں میں اشتعال

کوپن ہیگن (مانیٹرنگ ڈیسک)ڈنمارک میں شدت پسند رہنما راسموس پالوڈان کی جانب سے ایک ریلی میں قرآن کریم کی بے حرمتی کرنے پر مسلمان مشتعل ہو گئے اور علاقے میں مظاہرے پھوٹ پڑے ، لوگوں نے شدت پسند رہنما کے خلاف شدید نعرے بازی کی،پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے آنسو گیس کی شیلنگ کی، مظاہرین اور پولیس کی جھڑپیں بھی ہوئیں جن میں بعض افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔ڈینش وزیراعظم نے اس حرکت کی مذمت کرتے ہوئے لوگوں سے پرامن رہنے کی اپیل کی ہے ۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق افسوسناک واقعہ اس وقت پیش آیا جب کوپن ہیگن کے علاقے بلاگاڑدس میدان میں پولیس کے گھیرے میں جاری ایک ریلی کے دوران ملعون راسموس نے قرآن کریم کو ہوا میں اچھالا جس پر مسلمان مشتعل ہو گئے اور انہوں نے راسموس پر پتھر پھینکے ،پولیس راسموس کو وہاں سے بحفاظت نکال لے گئی۔جھڑپوں کے بعد پولیس نے 23 افراد کو گرفتار کر لیا۔بے حرمتی کی خبر پھیلنے پرشہر کے دیگر حصوں میں بھی لوگ سڑکوں پر نکل آئے اور راسموس کیخلاف نعرے لگائے ۔بعض علاقوں میں مشتعل افراد نے سائیکلوں اور کوڑے دانوں کو بھی نذر آتش کیا۔شہر میں پولیس کی اضافی نفری تعینات کر دی گئی ہے اور لوگوں سے گھروں میں رہنے اور احتجاج والے علاقے سے دور رہنے کی اپیل کی گئی ہے ۔

وزیراعظم لارس راسموسین نے اپنے بیان میں کہا کہ وہ راسموس کی اشتعال انگیز حرکت کو سختی سے مسترد کرتے ہیں، انہوں نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ پرامن رہیں اور راسموس کو تشدد کے بجائے دلیل سے جواب دیں تاکہ فسادی لوگ ہمارے اتحاد کو نقصان نہ پہنچا سکیں۔

یہ بھی دیکھیں

یمن کے مفرور صدرمنصور ہادی ریاض سے امریکہ فرار

صنعا(مانیٹرنگ ڈیسک)یمن کے مفرور اور مستعفی صدر منصور ہادی اپنے گھر والوں کے ہمراہ ریاض …