پیر , 14 اکتوبر 2019

شام کے مسائل کا حل مذاکرات کے ذریعے ممکن ہے:جواد ظریف

دمشق (مانیٹرنگ ڈیسک)ایران کے وزیر خارجہ نے شام میں صدربشاراسد کے ساتھ دوطرفہ ملاقات کو مثبت قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہم نے آستانہ مذاکرات اور باہمی تعاون پر تبادلہ خیال کیا۔اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف شام کے دورے کے بعد ترکی کے دارالحکومت انقرہ پہنچے۔ اس موقع پرصحافیوں کے ساتھ گفتگو میں مذاکرات کے ذریعہ شام کے مسائل کے حل پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ علاقے کے مسائل جلد حل ہوں گے۔

محمد جواد ظریف نے کہا کہ شام کے دورے کے موقع پربشار اسد کے حالیہ دورہ ایران، نائب ایرانی صدر اسحاق جہانگیری کے دورہ شام کے نتائج، طے پانے والے معاہدوں، آستانہ میں مذاکرات اور اقوام متحدہ کے فریم ورک میں سیاسی حل کے ذریعہ شامی مسائل کے حل کا جائزہ لیاگیا۔انہوں نے مزید کہا کہ ہم ترکی میں دو طرفہ، علاقائی مسائل بالخصوص شام اور شمالی افریقہ پر بات چیت کریں گے۔

ایران کے وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ اس دورے میں ترک ہم منصب کے ساتھ ملاقات میں دونوں ممالک کے درمیان اقتصادی، سیاسی تعلقات اور دونوں ملکوں کے صدور کے فیصلوں پر تبادلہ خیال کریں گے۔واضح رہے کہ ایران کے وزیر خارجہ نے کل منگل کے روز شام کا دورہ کیا تھا جس کے بعد وہ ترکی پہنچے۔

یہ بھی دیکھیں

امریکا نے کردوں کو دھوکہ دیا: کرد رہنما محمود صابر

دمشق: شام کے ایک کرد رہنما نے اعلان کیا ہے کہ امریکا نے کردوں کو …