جمعہ , 5 جون 2020

سعودی حکومت نے ایک ہی دن میں 37 شیعہ مسلمانوں کے سرقلم کردیئے

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک)سعودی عرب کی حکومت نے ایک ہی دن میں حکومت پر تنقید کرنے والے 37 شیعہ مسلمانوں کے سرکاٹ دیئے ہیں ۔اطلاعات کے مطابق سعودی عرب کے شہر ریاض، مکہ، مدینہ اور صوبہ قاسم میں مجموعی طور پر 37 شیعہ مسلمانوں کے سر قلم کیے گئے۔ ان افراد کو حکومت پر تنقید کے الزام میں سزائے موت سنائی گئی تھی۔

سعودی عرب نے چند سال پہلے سزائے موت پانے والے شیعہ عالم دین الشیخ باقر النمر کی تحریک اصلاح کے مزید 37 افراد کے سر قلم کر دیئے۔ تمام افراد کا تعلق سعودی عرب کے شیعہ گنجان علاقہ قطیف سے ہے ۔ ان میں شیعہ مجتہد و سعودی شیعہ فرقے کے عالم دین مجتہد الشیخ محمد العطیہ عبدلغنی بھی شامل ہیں ۔

واضح رہے کہ سعودی عرب اس سے قبل بھی سیکڑوں شیعہ مسلمانوں کو بہیمانہ طور پر قتل کرچکا ہے جن میں ممتاز شیعہ عالم دین شیخ باقر نمر کی شہادت بھی شامل ہے۔

یہ بھی دیکھیں

یمن؛ سرکاری فوج کی کارروائی میں متعدد سعودی اتحادی ہلاک متعدد زخمی

یمنی سرکاری فوج اور عوامی رضاکارفورسزنے سعودی اہلکاروں کے خلاف کارروائی کرکے متعدد کرایے کے …