پیر , 20 مئی 2019

انتقامی حربےصہیونی حکام کے لیے شرمندگی کاباعث بنیں گے: حماس

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)اسلامی تحریک مزاحمت ‘حماس’ نے شہید فلسطینی عمر ابو لیلیٰ کے غرب اردن کے شمالی شہر سلفیت میں مکان کی مسماری کو صہیونی فوج کی بزدلانہ کارروائی قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ صہیونیوں کے اس انتقامی حربے کا کوئی فائدہ نہیں ہوگا بلکہ مکانات مسماری صہیونی حکام کے لیے شرمندگی اور پیشمانی کا سبب بنے گی۔

حماس کی طرف سے بدھ کے روز جاری ایک بیان میں کہا گیا کہ فلسطینیوں کے مکانات کی مسماری اجتماعی سزا دینے کی مجرمانہ پالیسی ہے۔ صہیونیوں کو اس کے جواب میں شرمندگی کے سوا کچھ نہیں ملے گا۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ صہیونی دشمن فلسطینی شہداء کے گھروں کو مسمار کر سکتا ہے مگر فلسطینی قوم کے جذبہ آزادی اور مزاحمت کو ٹھنڈہ نہیں کر سکتا۔حماس نے شہید عمر ابولیلیٰ کے اہل خانہ کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا اور کہا کہ پوری فلسطینی قوم ان کے مکان کی مسماری کی بزدلانہ صہیونی کارروائی کی مذمت کرتی ہے۔خیال رہے کہ صہیونی فوج نے گذشتہ روز شہید فلسطینی عمر ابو لیلیٰ کا مکان دھماکے سے اڑا دیا تھا۔

یہ بھی دیکھیں

اسرائیل عالمی بائیکاٹ تحریک کے خلاف سرگرم

یروشلم (مانیٹرنگ ڈیسک)اسرائیلی اخبارات کے مطابق صہیونی ریاست کے بائیکاٹ کےلیے سرگرم عالمی تنظیموں کے …