جمعہ , 19 جولائی 2019

عالمی سطح پر سعودی عرب میں شیعوں کے قتل عام کی بھر پور مذمت جاری

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک)سعودی عرب نے سنگین جرائم کا ارتکاب کرتے ہوئے 37 شیعہ مسلمانوں کا سرکاٹ دیا جن میں ایک شیعہ عالم دین بھی شامل ہیں ۔ سعودی عرب کے اس وحشیانہ اور بہیمانہ اقدام کی عالمی سطح پر مذمت کا سلسلہ جاری ہے۔

ہندوستان کے ممتاز عالم دین حجۃ الاسلام والمسلمین مولانا کلب جواد نے سعودی عرب کے وحشیانہ اقدام کو سعودیہ میں اقلیتوں کا گلا گھونٹے کے سلسلے کی کڑی قراردیا ہے ادھر ہندوستان کے زیر انتظام جموں کشمیر میں حریت کانفرنس کے سینئر رہنما حجۃ الاسلام والمسلمین آغا سید حسن موسوی نے بھی ایک بیان میں سعودی کی طرف سے شیعہ مسلمانوں کے خلاف وحشیانہ اور مجرمانہ اقدام کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ عدل و انصاف کی سرزمین پر ظلم و بربریت اور ناانصافی کا بازارگرم ہوگیا ہے اور سعودی عرب کے حکام شیعہ مسلمانوں کا ناحق خون بہانے پر کمر بستہ ہیں۔

انھوں نے انسانی حقوق کے عالمی اداروں پر زور دیا کہ وہ سعودی عرب میں شیعہ مسلمانوں کے خلاف سعودی عرب کے ظلم و ستم کو روکوانے کے لئے اپنی انسانی ذمہ داریوں پر عمل کریں۔ ادھر پاکستان میں بھی کئی ممتاز شیعہ اور سنی علماء نے سعودی عرب کی طرف سے شیعہ مسلمانوں پر ہونے والے مظالم کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

طالبان نے وردک میں درجنوں طبی مراکز بند کرادیئے

افغانستان میں غیرملکی این جی او کےتحت چلنے والے درجنوں طبی مراکز طالبان نے بند …