پیر , 20 مئی 2019

سعودی عرب : 37 بے گناہوں کے سر قلم کئے جانے کے خلاف احتجاج

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک)لندن میں سعودی عرب کے سفارتخانے کے سامنے سماجی کارکنوں اور عوام کی بڑی تعداد نے آل سعود حکومت کے غیر انسانی اقدام اور37 بے گناہ مسلمانوں کے سر تن سے جدا کئے جانے کے خلاف مظاہرہ کیا۔مظاہرین نے آل سعود حکومت کے غیر انسانی اقدامات، جرائم اور37 بے گناہ مسلمانوں کے سر قلم کئے جانے کے خلاف مظاہرہ کرتے ہوئے آل سعود مردہ باد کے فلک شگاف نعرے لگائے۔

مظاہرین نے جن کے ہاتھوں میں پلے کارڈ اور سرقلم کئے جانے والے شہداء کی تصاویر تھیں سعودی عرب کے بائیکاٹ کا مطالبہ کیا۔ مظاہرین نے پلے کارڈوں پر لکھا تھا کہ سعودی عرب کی حمایت جرم ہے اور آل سعود قاتل ہے۔مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے سعودی عرب میں بڑے پیمانے پر انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر یورپی ممالک کی خاموشی کی مذمت کی اور اس جابر حکومت کی حمایت نہ کرنے کا مطالبہ کیا۔

اس سے قبل اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کی ہائی کمشنر نے بدھ کو اپنے بیان میں سعودی عرب میں سزائے موت سنائے جانے کے غیر منصفانہ فیصلوں کے طریقہ کار کے بارے میں جاری ہونے والی رپورٹ کا ذکر کرتے ہوئے 37 افراد کو سزائے موت دیئے جانے کی سخت الفاظ میں مذمت کی- انہوں نے ان افراد کے کیس کی سماعت کے طریقہ کار اور ملزمان سے جبری اعترافی بیان لینے کے لئے ایذا رسانیوں سے متعلق رپورٹوں پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے سعودی حکام سے مطالبہ کیا کہ وہ، اپنے قوانین پر نظرثانی کر کے مزید افراد کو سزائے موت دینے منجملہ ان تین لوگوں کو جنھیں عنقریب سزائے موت دینے کا اعلان کیا گیا ہے ان کی سزا پر عمل درآمد سے اجتناب کریں-سعودی عرب کی وزارت داخلہ نے منگل کو اعلان کیا تھا کہ 37 افراد کو سزائے موت دی گئی ہے- خبروں میں کہا گیا ہے کہ سعودی سیکورٹی اہلکاروں نے ان افراد کی گردنیں تن سے جدا کردیں-

یہ بھی دیکھیں

ایرانی قوم مضبوط عزم و ارادے سے امریکہ کو شکست دے گی: حسن روحانی

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک)اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر نے اس جانب اشارہ کرتے ہوئے کہ ایرانی …