جمعرات , 23 مئی 2019

بغاوت کا شبہ :ترکی میں حاضر سروس فوجی افسران اور اہلکار حراست میں

انقرہ (مانیٹرنگ ڈیسک)ترکی میں 115 حاضر سروس فوجی افسران اور اہل کاروں کو بغاوت کے شبہ میں گرفتار کرلیا گیا ہے۔اطلاعات کے مطابق ترکی کی سکیورٹی فورسز نے جمہوری حکومت کے خلاف سازشیں کرنے اور امریکہ میں مقیم اپوزیشن رہنما فتح اللہ گولن کے ساتھ رابطے رکھنے پر 115 فوجیوں کو حراست میں لے لیا۔ گرفتار ہونے والے تمام فوجی افسران و اہلکار حاضر سروس ملازمین ہیں۔

استنبول کے دفتر استغاثہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ترک فوج کے مختلف شعبوں کے 210 اہلکاروں کے خفیہ آئمین کے توسط سے جلا وطن رہنما فتح اللہ گولن کے ساتھ رابطے کی انٹیلی جنس اطلاعات ہیں جس کی روشنی میں تازہ کارروائی کی گئی۔واضح رہے کہ 2016ء میں ناکام فوجی بغاوت کے بعد سے اب تک 3 کرنل، 8 میجرز اور درجنوں لیفٹیننٹ سمیت سیکڑوں فوجی اہلکاروں کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

روس، جرمنی اور فرانس کے سربراہوں کا ایٹمی معاہدے کے تحفظ پر زور

ماسکو (مانیٹرنگ ڈیسک)روس، جرمنی اور فرانس کے سربراہوں نے سہ فریقی ٹیلی فونک کانفرنس میں …