اتوار , 9 مئی 2021

خاتون ٹیچر نے سبق یاد نہ کرنے پر 15 طالبات کے بال کاٹ ڈالے

چنیوٹ(مانیٹرنگ ڈیسک) صوبہ پنجاب کے ضلع چنیوٹ میں استانی نے سبق یاد نہ کرنے پر 15 طالبات کو انوکھی سزا دیتے ہوئے ان کے بال کاٹ دئیے۔تفصیلات کے مطابق چنیوٹ کے سرکاری اسکول میں طالبات کو سبق یاد نہ کرنے پر خاتون ٹیچر نے پندرہ بچیوں کے سر کے بال کاٹ دئیے، دوبارہ غلطی کرنے پر سر گنجا کرنے کی بھی دھمکی دے ڈالی۔طالبات کا کہنا ہے کہ ٹیچر عاصمہ نے بال کاٹنے کے بعد کئی گھنٹوں تک کمرے میں بھی بند رکھا۔

والدین کی جانب سے استانی کے ناروا سلوک کی شکایت درج کرانے کے بعد ڈپٹی کمشنر امان انور نے اسکول ٹیچر عاصمہ کو معطل کردیا۔ڈپٹی کمشنر امان انور نے مذکورہ اسکول ٹیچر عاصمہ کے ناروا سلوک کی سی ای او ایجوکیشن سے دو دن میں تفصیلی رپورٹ طلب کرلی۔

واضح رہے کہ دو ماہ قبل ملتان کے گورنمنٹ ایم اے جناح اسکول میں سالانہ تقریب کے لیے فنڈ نہ دینے پر طالب علم کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا تھا، بعدازاں تشدد کرنے والے 2 اساتذہ کو معطل کردیا گیا تھا۔

طالب علم احمر کا کہنا تھا کہ اساتذہ نے پیٹ میں لاتیں ماریں، تینوں اساتذہ کان پکڑوا کر ڈنڈے مارتے رہے جبکہ ساتھی طلباء کا کہنا تھا کہ احمر کو سالانہ تقریب کے لیے 500 روپے فنڈ نہ دینے پر مارا گیا، احمر کو ڈنڈوں، لاتوں، گھونسوں اور مکوں سے بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا گیا تھا۔طالب علم پر تشدد کی رپورٹ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اور ڈپٹی کمشنر کو بھجوادی گئی تھی۔

یہ بھی دیکھیں

نشے کے عادی شخص نے نشہ نہ ملنے پر چھری نگل لی

بھارت میں نشے کے عادی شخص نے نشہ نہ ملنے پر باورچی خانے میں استعمال …