جمعہ , 14 مئی 2021

سٹاک ایکس چینج میں پی آئی اے کے شیئرز کی ٹریڈنگ کی معطلی کا خدشہ

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)پی آئی اے انتظامیہ نے22مئی تک سالانہ عام اجلاس اور سہ ماہی رپورٹس جمع نہیں کرائےتو پاکستان سٹاک ایکس چینج میں پی آئی اے کے شیئرز کی ٹریڈنگ کی معطلی کا خدشہ ہے، پی آئی اے کو شیئرزمعطلی کے حوالےسے پاکستان اسٹاک ایکس چینج نے نوٹس جاری کردئیے۔تفصیلات کے مطابق پاکستان سٹاک ایکس چینج انتظامیہ کاکہناتھاکہ پی آئی اےکے شیئرز کی اسٹاک ایکسچینج میں معطلی ہو سکتی ہے،اس سے قبل بھی پی آئی اے کو 9اکتوبر 2018 کو شیئرکی معطلی کا نوٹس جاری کیا گیا تھا،جاری کردی نوٹس میں واضح کیاگیا کہ پِی آئی اے انتظامیہ 22مئی تک سالانہ عام اجلاس اور سہ ماہی رپورٹس جمع کرائے، بصورت دیگر پی آئی اے کے شیئرز کی سٹاک ایکسچینج میں معطلی ہوسکتی ہے۔

نوٹس میں مزید کہاگیا کہ22مئی تک سالانہ اجلاس اور سہ ماہی رپورٹس جمع نہ کرنے پر پی آئی اے کے شیئرز کی ٹریڈنگ معطل کردی جائیگی، اور یہ امکان بھی ہے کہ پِی آئی اے کو ڈیفالٹرز کمپنیز کی فہرست میں بھی شامل کردیا جائے گا۔

یہ بھی دیکھیں

حکومت نے تیل و گیس کی پیداوار کی ریئل ٹائم نگرانی شروع کردی

اسلام آباد: صوبوں کی جانب سے شفافیت کے مطالبات سامنے آنے کے بعد وفاقی حکومت …