منگل , 11 مئی 2021

فلسطین کو رسمی تسلیم کرنے کا فیصلہ قابل فخر ہے : وزیر خارجه سوئیڈن

سٹاک ہوم (مانیٹرنگ ڈیسک)سوئیڈن کی وزیر خارجہ نے ۲۰۱۴ میں فلسطین کو تسلیم کرنے کے فیصلے کو قابل فخر قرار دیا ہے۔ سوئیڈن کی وزیر خارجہ «مارگوٹ والسٹروم» نے نیوز چینل ( SVT ) سے گفتگو میں اسرائیل کے اعتراضات کو رد کرتے ہویے کہا کہ ہمیں فخر ہے کہ ہم نے سال ۲۰۱۴ کو فلسطین کو تسلیم کرنے کا احسن قدم اٹھایا۔انکا کہنا تھا: ہمارے بعد ہماری تقلید میں بہت سے ممالک نے فلسطین تسلیم کیا اور یہ مسئله ثابت کرتا ہے کہ ہمارا کام درست تھا اور ہم فلسطین کی حمایت جاری رکھیں گے۔

والسٹروم نے اسرائیل کی تنقید کو بیجا قرار دیا اور کہا: اسرائیل اور سوئیڈن کے درمیان مذاکرات بھی جاری رہے گا۔اسرائیل اور سوئیڈن کے درمیان تعلقات سال ۲۰۱۴ میں فلسطین کی شناخت کے بعد کشیدہ ہوگئے تھے اور سال ۲۰۱۵ میں والسٹروم نے تل ابیب کا سفر کینسل کردیا تھا۔

قابل ذکر ہے کہ یورپی یونین کے ۲۸ ممالک میں سوئیڈن پہلا ملک تھا جس نے ۲۰۱۴ میں فلسطین کو رسمی طور پر تسلیم کرنے کا اعلان کیا جسکے بعد جمهوری چیک، اسلواکیہ، ہنگری، بلغاریہ، رومانیہ، مالٹ اور قبرس نے بھی فلسطین کو تسلیم کرنے کا اعلان کیا۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …