اتوار , 16 مئی 2021

’کچھ لوگوں کو این ڈی ایس، را سے فنڈنگ کے شواہد موجود ہیں‘شاہ محمود قریشی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پاکستان کے سیکیورٹی اداروں کے پاس ملک میں کچھ لوگوں کو افغانستان کی نیشنل ڈائریکٹوریٹ آف سیکیورٹی (این ڈی ایس) اور بھارت کی ریسرچ اینالسز ونگز (را) کی فنڈنگ کے شواہد موجود ہیں۔ملتان میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پشتون عوام ملک کے خیرخواہ ہیں اور انہوں نے ہمیشہ پاکستان کی مدد کی ہے۔انہوں نے اعتراف کیا کہ پشتون عوام نے افغان جنگ کے دوران بڑے مصائب کا سامنا کیا ہے۔

وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ افغانستان میں امن پاکستان کے لیے بھی فائدہ مند ہوگا کیونکہ دونوں ممالک میں امن ایک دوسرے سے جڑا ہوا ہے، تاہم افغانستان کئی عرصے سے جنگ کی حالت میں ہے اور وہاں امن قائم ہونے میں مزید وقت لگے گا۔شاہ محمود قریشی نے پاک چین دوستی پر بھارتی پروپیگنڈا کو بھی آڑھے ہاتھوں لیا اور کہا کہ چین پاکستان کا دیرینہ دوست ہے اور وہ معاشی ترقی میں پاکستان کی مدد کر رہا ہے۔وزیر خارجہ نے کہا کہ بھارت مولانا مسعود اظہر کے لیے بُنے گئے اپنے ہی جال میں پھنس گیا ہے، اسے ایسے ہتھکنڈوں سے کچھ بھی حاصل نہیں ہوا۔

انہوں نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی حکومت پلوامہ حملے میں پاکستان کے ملوث ہونے کے شواہد فراہم کرنے میں بھی ناکام ہوگئی جس کی وجہ سے بھارتیوں کا اصلی چہرہ دنیا کے سامنے آگیا۔شاہ محمود قریشی نے پنجاب حکومت کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت میں معاملات احسن انداز میں چل رہے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے حال ہی میں اسلام آباد میں اراکین قومی اسمبلی سے ایک ملاقات کی تھی جہاں نئے بلدیاتی نظام سئے متعلق اظہار خیال کیا گیا جبکہ اسی حوالے سے ایک اور میٹنگ 8 مئی کو ہوگی۔شاہ محمود نے واضح کیا کہ نئے بلدیاتی نظام سے متعلق حکومت اور اس کے اتحادیوں کے درمیان اختلافات نہیں ہیں اور حکومتی اتحاد اس معاملے میں ایک صفحے پر ہے۔

ملک میں پیٹرولیم مصنوعات میں اضافے کے حوالے سے بات کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ اس معاملے میں کابینہ اجلاس کے دوران بات چیت ہوئی ہے، تاہم بین الاقوامی ٹرینڈ کو برقرار رکھنے کے لیے قیمتوں میں اضافہ کرنا تھا۔شاہ محمود قریشی نے گورنر اسٹیٹ بینک اور چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو کو ہٹانے سے متعلق وضاحت دیتے ہوئے کہا کہ ان دونوں افراد کو انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ (آئی ایم ایف) کی ہدایت پر نہیں بلکہ ان کی خراب کارکردگی پر ہٹایا گیا۔

یہ بھی دیکھیں

ملک میں کورونا کی تشویشناک صورتحال

پاکستان میں کورونا وائرس کے مثبت کیسز میں روز بروز تشویشناک حد تک اضافہ ہورہا …